دیوار کے ہوئے تو کبھی در کے ہو گئے : افروز رضوی

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
1:10 AM
Threads
292
Messages
1,204
Reaction score
1,923
Points
803
Gold Coins
2,508.43
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
دیوار کے ہوئے تو کبھی در کے ہو گئے
افروز رضوی

دیوار کے ہوئے تو کبھی در کے ہو گئے
میرے چراغ باد ستم گر کے ہو گئے

میں اس طرح سے کوچۂ وحشت کی ہو گئی
ملاح جس طرح سے سمندر کے ہو گئے

اس کے دل و نگاہ کا کس سے کریں گلہ
اس کے دل و نگاہ تو پتھر کے ہو گئے

جو مجھ کو چاہتے تھے کبھی سر سے پاؤں تک
دشمن نہ جانے کیوں وہ مرے سر کے ہو گئے

جو تیرے پیرہن کی مہک لے کے آئی تھی
ہم تو اسی ہوائے معطر کے ہو گئے

میں تیری خوشبوؤں کی طلب گار جب ہوئی
تیرے چمن کے پھول بھی پتھر کے ہو گئے

یہ کیسی گردشیں ہیں کہ ارض و سما پہ آج
شمس و قمر چراغ برابر کے ہو گئے

خیمے جلے چراغ بجھے اور اس کے بعد
نیزوں پہ سر بلند بہتر کے ہو گئے

بارش کو بادلوں کو سمندر کو چھوڑ کر
افروزؔ ہم تو ساقیٔ کوثر کے ہو گئے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
 

Doctor

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Joined
Apr 25, 2018
Local time
1:10 AM
Threads
849
Messages
12,324
Reaction score
14,294
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,443.30
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks