مساجد کے فضائل ، آداب اور احکام قسط دوم

Afzal339

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Scientist
Helping Hands
Joined
Apr 25, 2018
Local time
2:23 AM
Threads
206
Messages
593
Reaction score
954
Points
460
Gold Coins
420.13
مسجد میں داخل ہونے اور نکلتے وقت دائیاں اور بائیاں پاؤں رکھنے ترتیب :۔
حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں:کہ یہ سنت ہے کہ جب تو مسجد میں داخل ہو تو دائیں پاؤں سے ابتداٗ کرے اور جب نکلے تو بائیں پاؤں سے ابتدا کرے۔
عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ رَضِی َاللہ عَنہُ قَالَُ: «مِنَ السُّنَّۃِ إِذَا دَخَلْتَ الْمَسْجِدَ أَنْ تَبْدَأَ بِرِجْلِکَ الْیُمْنَی، وَإِذَا خَرَجْتَ أَنْ تَبْدَأَ بِرِجْلِکَ الْیُسْرَی
المُستَدرَک عَلَی الصحیحین کِتَابُ الطھارہ وَمِنْ کِتَابِ الْإِمَامَۃِ، وَصَلَاۃِ الْجَمَاعَۃِ
مسجد میں زیب و زینت اختیار کرکے جانا:۔
اے اولاد آدم! مسجد میں جاتے وقت زیب و زینت کو اختیار کرو۔
یٰبَنِیْٓ ادَمَ خُذُوْا زِیْنَتَکُمْ عِنْدَ کُلِّ مَسْجِدٍ۔۔۔۔۔
قرآن مجید سورہ اعراف
نوٹ:اس آیت کی تفسیر میں مفسرین فرماتے ہیں کہ اولیٰ یہ ہے کہ صرف سترپوشی پر کفایت نہ کی جائے؛ بلکہ اپنی وسعت کے مطابق زینت اختیار کی جائے یعنی اچھے کپڑے زیب تن کیے جائیں۔ حضرت حسن رضی اللہ عنہ کی عادت تھی کہ نماز کے وقت اپنا سب سے بہتر لباس پہنتے تھے اور فرمایا کرتے تھے کہ: اللہ تعالیٰ جمال کو پسند فرماتا ہے؛ اس لیے میں اپنے رب کے لیے زینت وجمال اختیار کرتا ہوں پھر یہ آیت کریمہ تلاوت فرماتے۔ معارف القرآن
جمعے کے دن مسجد جانے سے پہلے غسل کرنا:۔
؁ْحضور ﷺنے فرمایاکہ:جب تم میں سے کوئی شخص جمعہ کی نماز کے لیے آئے تو وہ غسل کرے۔
عَن أَبَی ہُرَیْرَۃَ رَضِیَ اللہ عَنہُ۔۔۔۔۔۔۔قَالَ رَسُولُ اللَّہِ ﷺ:إِذَا أَتَی أَحَدُکُمُ الْجُمُعَۃَ فَلْیَغْتَسِلْ
سُنَن اَبِی دَاؤد کِتَابُ الطھارۃ بَابٌ فِی الْغُسْلِ یَوْمَ الْجُمُعَۃِ
مسجد میں لوگوں کی گردنیں پھلانگنا برا کام ہے:۔
حضور ﷺ کے زمانے میں ایک آدمی جمعہ کے دن مسجد میں داخل ہوا، اس وقت حضور ﷺخطبہ دے رہے تھے، وہ آدمی لوگوں کی گردنیں پھلانگ کر آگے جانے لگا، تو حضورﷺنے فرمایا: ”بیٹھ جاؤ، تم نے لوگوں کو تکلیف پہنچائی، اور آنے میں تاخیر بھی کی۔
عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّہِ رَضِی َاللہ عَنہُ، أَنَّ رَجُلًا دَخَلَ الْمَسْجِدَ یَوْمَ الْجُمُعَۃِ، وَرَسُولُ اللَّہِ ﷺ یَخْطُبُ، فَجَعَلَ یَتَخَطَّی النَّاسَ، فَقَالَ رَسُولُ اللَّہِ ﷺ اجْلِسْ، فَقَدْ آذَیْتَ وَآنَیْتَ
سُنَن اِبنِ مَاجَہ کِتَابُ إِقَامَۃِ الصَّلَاۃِ، وَالسُّنَّۃُ فِیہَا بَابُ مَا جَاءَ فِی النَّہْیِ عَنْ تَخَطِّی النَّاسِ یَوْمَ الْجُمُعَۃ
مسجد میں داخل ہونے کے بعد سلام کرنا:۔
حضورﷺ مسجد میں تشریف فرما تھے، آپ کے ساتھ لوگ (صحابہ کرام رضوان اللہ علیھم اجمعین)بھی بیٹھے تھے، اسی دوران اچانک تین آدمی آئے، ان میں سے دوحضور ﷺ کی طرف بڑھ آئے، اور ایک واپس چلا گیا، جب وہ دونوں حضورﷺ کے پاس پہنچ کر رکے تو انہوں نے سلام کیا۔۔۔۔
عَنْ أَبِی وَاقِدٍ اللَّیْثِیِّ رَضِی َاللہ عَنہُ أَنَّ رَسُولَ اللہِ صَلَّی اللَّہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ بَیْنَمَا ہُوَ جَالِسٌ فِی الْمَسْجِدِ وَالنَّاسُ مَعَہُ إِذْ أَقْبَلَ ثَلاَثَۃُ نَفَرٍ، فَأَقْبَلَ اثْنَانِ إِلَی رَسُولِ اللہِ صَلَّی اللَّہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ وَذَہَبَ وَاحِدٌ، فَلَمَّا وَقَفَا عَلَی رَسُولِ اللہِ صَلَّی اللَّہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ سَلَّمَا۔۔۔۔
سُنن التِرمِذِی أَبْوَابُ الاِسْتِءْذَانِ وَالآدَابِ بَاب
نوٹ:مسجد مُناجات اوریکسوئی کے ساتھ عبادت کرنے کی جگہ ہے، مخلوق سے رابطہ ختم اور خالق سے رابطہ قائم کرنے کا مرکز ہے؛ لہٰذا ایسا کوئی طریقہ جو اس یکسوئی او رمناجات میں خلل، بے قراری اور بے توجہی کا ذریعہ بنے اُسے ممنوع ہونا چاہیے، چنانچہ فقہاء کرام نے اسی علت کی وجہ سے لکھا ہے کہ جب مسجد میں لوگ عبادت، ذکروفکر، دعا،تدریس، وعظ ونصیحت اور تلاوت وغیرہ میں مشغول ہوں تو اتنی اونچی آواز سے سلام نہیں کرنا چاہیے جس سے عبادت میں مصروف افراد کو دقت ہو یعنی دھیمی آواز سے سلام کرے تاکہ جو لوگ عبادت میں مشغول نہ ہو ں وہ سن کر جواب دے سکیں اور جوعبادت میں مشغول ہیں ان کی عبادت میں خلل واقع نہ ہو۔کیوں کہ جب لوگ مسجد میں عبادت وغیرہ مشغول ہوں تو بلند آواز سے تلاوت قرآن مجید بھی منع ہے نیز یہ ساری بحث اس صورت میں ہے کہ جب مسجد میں جماعت کھڑی نہ ہواور جب جماعت کھڑی ہو تو اس وقت سلام نہ کیا جائے بلکہ فوراً جماعت میں شامل ہو۔
مسجد میں داخل ہونے کے بعد کا عمل:۔
حضور ﷺنے فرمایاکہ:جب کوئی شخص مسجد میں داخل ہو تو اسے چاہیے کہ بیٹھنے سے پہلے دو رکعات نماز پڑھے۔
عَنْ أَبِی قَتَادَۃَ السَّلَمِیِّ رَضِی َاللہ عَنہُ َنَّ رَسُولَ اللَّہِ ﷺ قَالَ: إِذَا دَخَلَ أَحَدُکُمُ المَسْجِدَ فَلْیَرْکَعْ رَکْعَتَیْنِ قَبْلَ أَنْ یَجْلِسَ
صَحِیح بُخَارِی کِتَاب ُ الصلاۃ بَابُ إِذَا دَخَلَ أَحَدُکُمُ المَسْجِدَ فَلْیَرْکَعْ رَکْعَتَیْنِ قَبْلَ أَنْ یَجْلِسَ
نوٹ:نماز تحیۃ المسجد اس صورت میں پڑھے کہ جب جماعت میں بھی وقت ہو اور سنت نماز کا بھی حرج نہ ہورہاہولیکن اگر جماعت میں وقت کم ہو تواسے چھوڑکر جماعت میں شمولیت کا انتظار کرے یا وقت تو ہو مگر اس میں سنتوں کا حرج یعنی سنتوں کا وقت نکل رہاہوتو پھر بھی اسے چھوڑ کر سنتیں ادا کریں۔
 
Last edited:

Doctor

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Top Poster Of Month
Joined
Apr 25, 2018
Local time
6:23 AM
Threads
842
Messages
12,115
Reaction score
14,133
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,352.31
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
:masha-allah:
اللہ پاک ہمیں دین کی صحیح سمجھ اور عمل کی توفیق عطاء فرمائے
:jazak-allah:
ایسی ہی اچھی باتوں کا اشتراک جاری رکھیں
:goodpost:
 

Lovely Eyes

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
6:23 AM
Threads
272
Messages
1,159
Reaction score
1,892
Points
703
Gold Coins
2,485.93
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks