پاکستان کے لیے اچھی خبر،ایشیا کرکٹ کپ 2020ء کی میزبانی پاکستان کو مل گئی

PakArt UrduLover

Thread Starter
Staff member
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
10:35 AM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,958
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
108.63
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
Permanently Change Username Color & Style.
پاکستان کے لیے اچھی خبر،ایشیا کرکٹ کپ 2020ء کی میزبانی پاکستان کو مل گئی

پاکستان اگلے سال آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ سے قبل ایشیا کپ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کی میزبانی کرے گا تاہم میچز کس شہر میں ہوں گے یہ فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے۔​
اس بات کا فیصلہ سنگاپور میں ایشین کرکٹ کونسل کے اجلاس میں کیا گیا جس میں پاکستان کی نمائندگی چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) احسان مانی اور منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان نے کی۔
اجلاس میں بھارت، سری لنکا، بنگلہ دیشن اور افغانستان کے حکام نے بھی شرکت کی۔ پی سی بی ترجمان کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا میں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اکتوبر میں ہوگا جبکہ پاکستان ایشیا کپ ٹورنامنٹ ستمبر میں کرائے گا۔
2008 میں کراچی نے 50 اوورز کے ایشیا کپ کی میزبانی کی تھی۔ ایشین کرکٹ کونسل اپنے نشریاتی حقوق فروخت کرنے اور دفتر قائم کرنے کیلئے جلد کام شروع کردے گا۔
ترجمان کا کہنا ہے کہ چین میں 2022 میں ہونے والے ایشین گیمز میں کرکٹ کی واپسی ہورہی ہے۔ 2018 کے ایشین گیمز میں کرکٹ شامل نہیں تھا۔
ایشین کرکٹ کونسل چین میں کرکٹ گراؤنڈ کی تعمیر اور دیگر کاموں کا جائزہ لے گا۔ اس سے قبل گوانگ ژو میں ہونے والے ایشین گیمز میں کرکٹ شامل تھا۔
پی سی بی کا کہنا ہے کہ جلد ایشیا کپ کی میزبانی کیلئے شہر کا نام فائنل کرکے تیاری شروع کردی جائے گی۔
ذرائع کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ آئی سی سی ورلڈ کپ کے بعد ایشیا کپ کی تیاریوں کا آغاز کرے گا۔ اجلاس میں 2022ء کی ایشئین گیمز میں کرکٹ کی شمولیت کی منظوری بھی دے دی گئی ہے، ایشین گیمز 2018ء میں کرکٹ شامل نہیں تھی۔
دوسری جانب ایشین کرکٹ کونسل کی سائیڈ لائن پر پاکستان کرکٹ بورڈ اور سری لنکن کرکٹ حکام کی ملاقات ہوئی ہے جس میں پی سی بی نے پاکستان میں سری لنکن ٹیم کی میزبانی کی پیشکش کی ہے اور دعوت دی ہے کہ سری لنکن کرکٹ بورڈ اپنا سیکیورٹی وفد پاکستان بھیجے جو حالات اور انتظامات کا جائزہ لے۔
اس حوالے سے پی سی بی حکام کا کہنا ہے کہ سری لنکن کرکٹ حکام سے بات چیت اچھی رہی، سری لنکا کو کراچی اور لاہور میں میچز کھیلنے کی پیشکش کی ہے، امید ہے کہ مثبت جواب ملے گا۔
خیال رہے کہ انٹرنیشل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی جانب سے ایشیا کپ کے انعقاد کا فیصلہ 1983ء میں کیا گیا تھا۔ اس کے بعد سے لے کر اب تک ہر دو سال بعد اس کا انعقاد کیا جاتا ہے۔
پہلا ایشیا کپ 1984ء میں شارجہ کی سرزمین پر کھیلا گیا۔ سری لنکا کیساتھ کشیدگی کی وجہ سے بھارت نے 1986ء میں ایشیا کپ کا بائیکاٹ کیا جبکہ 1990ء میں بھارت کے ساتھ سیاسی کشیدگی کے باعث پاکستان نے یہ ٹورنامنٹ کھیلنے سے انکار کر دیا تھا۔
2015ء میں ایشین کرکٹ کونسل کی ڈاؤن سائزنگ کی وجہ سے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے فیصلہ کیا گیا کہ ایشیا کپ کے میچز بالترتیب ون ڈے انٹرنیشنل اور ٹی ٹونٹی فارمیٹ کے تحت کھیلے جائیں گے۔
ریکارڈ پر نظر دوڑائی جائے تو انڈین ٹیم 7 مرتبہ ایشیا کپ کا ٹائٹل جیت کر پہلے نمبر پر براجمان ہے، سری لنکا نے پانچ مرتبہ اس میں کامیابی حاصل کی ہے جبکہ پاکستان نے 2 مرتبہ یہ اعزاز حاصل کیا ہے۔
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks