کفر کا نظام اور ناانصافی کا نظام

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
300
Messages
1,212
Reaction score
1,936
Points
803
Gold Coins
2,517.46
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
حضرت علی کرم اللہ وجہ کا ایک مشہور قول ہے کہ کفر کا نظام تو کامیابی کے ساتھ چل سکتا ہے پر ناانصافی پر مبنی نظام کا چلنا ناممکن ہے۔ اس قول عظیم کے تناظر میں اگر ہم اپنے ملک پاکستان کے نظام عدل پر نظر دوڑائیں تو حیرت کے جزیروں میں غرق ہوجاتا ہے انسان۔ اور ہو بھی کیوں نہیں کہ ہمارے ہاں تو ملک کے وجود میں آنے کے بعد پہلے دن سے آج تک شاید ہی کوئی ایسا عدالتی فیصلہ ہو جسے ہم عدل و انصاف کے عین مطابق قرار دے کر مثالی کہہ سکیں۔

2612

نظام عدل کے ساتھ ناانصافی کا یہ سلسلہ کہاں سے شروع اور کس نے اس کی بنیاد ڈالی، اس بات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے یہ وثوق سے کہا جاسکتا ہے کہ اس ملک میں حصول انصاف اب مشکل سے کہیں آگے کا سفر طے کرتے ہوئے ناممکنات کی حد تک جا پہنچا ہے اور اس کی تازہ مثال سانحہ ساہیوال پر لاہور کی انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت کا وہ فیصلہ ہے جس میں ایک معصوم، بیگناہ اور نہتے خاندان کے لوگوں کو گولیوں سے چھلنی کرنے والے تمام ملزمان کو باعزت بری کرنے کا فیصلہ سنادیا گیا۔

بہت حیرت ہوئی اس فیصلے پر جس میں شک کا فائدہ دے کر ان تمام 6 ملزمان کو باعزت بری کردیا گیا جن کی بندوقوں نے رواں برس کے پہلے مہینے میں چار افراد سے زندہ رہنے کا حق چھین لیا تھا۔ جن میں میاں بیوی، تیرہ سالہ بیٹی اور ڈرائیور شامل تھے۔ اس مقدمے میں 49 گواہان کے بیانات قلمبند کیے گئے تھے، جن میں مقتول محمد خلیل اور مقتولہ نبیلہ کے دو معصوم بچے بھی شامل ہیں، جو جائے وقوعہ پر گولیوں کا نشانہ بننے والی گاڑی میں موجود تھے اور زخمی ہوئے تھے۔ چوںکہ ملزمان کا تعلق سی ٹی ڈی پنجاب سے تھا تو انہیں تمام شواہدات و بیانات کے باوجود شک کا فائدہ دے کر بری کیا گیا۔
چلیں جی یہ تھا ہمارے پیارے ملک کی ایک خصوصی انسداد دہشتگردی عدالت کا فیصلہ، جس سے کمزور نظام عدل کی قلعی حسب معمول ایک بار پھر کھل گئی ہے۔ اسی دن، اسی تاریخ کو، برادر اسلامی ملک بنگلہ دیش (جو کہ اگست 1947 سے دسمبر 1971 تک ہمارا ہی حصہ تھا) کی عدالت کا ایک فیصلہ بھی میڈیا کی زینت بنا، جس میں انیس سالہ طالبہ کو ہراساں کرنے اور زندہ جلانے جیسے اقدام میں ملوث تمام 16 افراد کو پھانسی کی سزا سنادی گئی ہے۔

وہ کہتے ہیں ناں کہ فرق صاف ظاہر ہے۔ تو اس معاملے میں بھی فرق صاف نظر آرہا ہے کہ بنگلہ دیش جیسا ملک، جسے ہم کمزور سمجھ کر کمتر گردانتے آئے تھے، آج وہی بنگلہ دیش نہ صرف معیشت و کاروبار بلکہ نظام عدل میں بھی ہم سے بہت آگے نکل گیا ہے۔

19 سالہ طالبہ نصرت جہاں، جو چٹاگانگ صوبے کے ضلع فینی کے ایک ڈگری مدرسہ میں زیر تعلیم تھی، جنہیں پرنسپل کی جانب سے ہراسانی کا سامنا تھا۔ بہادر طالبہ نے خاموش رہنے کے بجائے حصول انصاف کےلیے کیس دائر کروایا۔ مقامی پولیس نے پرنسپل کو گرفتار بھی کیا، جس کے بعد پرنسپل کے ساتھیوں نے متاثرہ طالبہ کو مصالحت کے بہانے بلاکر مدرسہ کی چھت پر تیل چھڑک کر زندہ جلادیا تھا۔ اس واقعے کے بعد طالبہ نصرت جہاں جھلس کر شدید زخمی ہوگئی تھی اور چند دن بعد اسپتال میں اس کا انتقال ہوگیا۔ اپنی موت سے قبل طالبہ نے تمام ملزمان نے نام وڈیو بیان میں بتادیے تھے۔ لہٰذا پولیس نے نصرت جہاں کے بیان کی روشنی میں تمام ملزمان کو گرفتار کیا۔ چارج شیٹ عدالت میں پیش کی اور صرف باسٹھ دن کی قلیل مدت میں عدالت نے تمام سولہ ملزمان کو پھانسی کا حکم دیا۔

میرے لیے تو حیرت کا مقام ہے، آخر ہمارے ملک کی عدالتوں سے اس طرح کے فیصلے آنے کا سلسلہ کب ختم ہوگا؟ کیا عدلیہ، حکومت اور ریاست اس سوال کا کوئی تسلی بخش جواب دینے کی زحمت کریں گے، یا یہ مملکت بس یوں ہی چلتی رہے گی؟

خدارا! اب ختم کرو یہ سب۔ کب تک ایسے فیصلے آتے رہیں گے؟ کب تک یوں خلق خدا کو حصول انصاف کے اہم ترین حق سے محروم رکھا جائے گا؟ موجودہ چیف جسٹس آف پاکستان جناب جسٹس آصف سعید کھوسہ ایک سے زائد مرتبہ اس امر کا اظہار کرچکے ہیں کہ جھوٹی گواہی کا رائج نظام ہمارے نظام عدل کےلیے زہر قاتل ہے اور تمام غلط فیصلوں کی وجہ بھی جھوٹے گواہان ہی ہیں۔ جب تک جھوٹی گواہی کا نظام سرے سے ختم نہیں کیا جائے گا تب تک فراہمی انصاف ایک خواب بنا رہے گا۔ چیف جسٹس آف پاکستان کی یہ بات بہت وزن رکھتی ہے۔ مگر باوجود ببانگ دہل یہ اعتراف کرنے کے ابھی تک اس ضمن میں کوئی ٹھوس اقدام نہیں اٹھائے گئے۔ جس کے نتیجے میں پوری قوم نے سانحہ ساہیوال کا حیرتناک فیصلہ بھی دیکھ لیا۔

وزیراعظم عمران خان نے بھی انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت کے اس فیصلے کو نامناسب قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ فیصلے میں انصاف کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔ میں سمجھتا ہوں کہ ملک کے وزیراعظم کا ایک اہم کیس کے کمزور فیصلے پر صرف روایتی بیان جاری کرنا کافی نہیں، بلکہ انہیں متاثرہ خاندان سے رابطہ کرکے انصاف کے حصول کو ہر حال میں ممکن بنانے کی تسلی دینی چاہیے تھی۔ خیر اس ملک میں نہ ماضی میں ایسا کچھ ہوا ہے اور نہ ہی اب ایسی توقع کی جاسکتی ہے۔ مگر ایک سوال ضرور بنتا ہے کہ عمران خان جس ریاست مدینہ کی مثالیں دے دے کر نہیں تھکتے، اسی ریاست مدینہ کے بانی و آخری نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی مشہور حدیث ہے کہ چوری کرنے کی سزا جو عام آدمی کےلیے مقرر کی گئی ہے وہی سزا میری اپنی اولاد کےلیے بھی ہوگی۔

ایک ہی دن دو مختلف اسلامی ممالک کی عدالتوں سے آئے فیصلے مجھ سمیت بہت لوگوں کو سامان عبرت و حیرت ضرور مہیا کررہے ہیں۔

ماخوذ۔ ۔ ۔
 

Doctor

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Joined
Apr 25, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
850
Messages
12,397
Reaction score
14,320
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,446.82
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائی کی ہم لوگ بحیثیت قوم آج دنیا میں جو ذلیل و خوار ہو رہے ہیں ان کی متعدد وجوہات میں سے ایک یہ بھی ہے کہ ہمارے ہاں قانون کو اپنی مرضی سے اپنی ضرورت سے استعمال کیا جاتا ہے جب تک ہمارے معاشرے میں انصاف سب کے لئے یکساں نہیں ہو جاتا عوام کی بے چینی اور پریشانی دور نہیں ہو گی اور ہم یوں ہی کہ بجائے اس کے کہ مل جل کے ملک کی ترقی کیلئے کام کریں ایک دوسرے کی ٹانگ کھینچنے میں مصروف رہیں گے اللہ تعالی ہمارے حال پر رحم کرے
اور اچھی تحریر کا اشتراک کرنے کا شکریہ
 
Joined
Aug 2, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
74
Messages
559
Reaction score
435
Points
193
Location
Dera Ismail Khan KPK
Gold Coins
4.98
اس قسم کے بے پناہ واقعات ہیں۔ ہمارے ملک کا قانون، وڈیرے ،سیاستدان،وکیل،اآفیسر شاہی،نے پورے نظام کو برباد کر کے رکھ دیا ہے۔اللہ پاک رحم کرے۔
 

Syed Waqas

Staff member
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Writer
Popular
Lazy but Talented
Be Different
Captain of My Soul
Do the Impossible
Joined
May 6, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
131
Messages
2,647
Reaction score
3,519
Points
839
Location
Karachi
Gold Coins
2,168.59
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Single Thread Highlight for 1 Week.
Change Username Style.
اللہ پاک ہمارے ملک پر اپنا کرم فرمائے آمین
 

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
300
Messages
1,212
Reaction score
1,936
Points
803
Gold Coins
2,517.46
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائی کی ہم لوگ بحیثیت قوم آج دنیا میں جو ذلیل و خوار ہو رہے ہیں ان کی متعدد وجوہات میں سے ایک یہ بھی ہے کہ ہمارے ہاں قانون کو اپنی مرضی سے اپنی ضرورت سے استعمال کیا جاتا ہے جب تک ہمارے معاشرے میں انصاف سب کے لئے یکساں نہیں ہو جاتا عوام کی بے چینی اور پریشانی دور نہیں ہو گی اور ہم یوں ہی کہ بجائے اس کے کہ مل جل کے ملک کی ترقی کیلئے کام کریں ایک دوسرے کی ٹانگ کھینچنے میں مصروف رہیں گے اللہ تعالی ہمارے حال پر رحم کرے
اور اچھی تحریر کا اشتراک کرنے کا شکریہ
tks:
 

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
2:28 PM
Threads
300
Messages
1,212
Reaction score
1,936
Points
803
Gold Coins
2,517.46
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
اس قسم کے بے پناہ واقعات ہیں۔ ہمارے ملک کا قانون، وڈیرے ،سیاستدان،وکیل،اآفیسر شاہی،نے پورے نظام کو برباد کر کے رکھ دیا ہے۔اللہ پاک رحم کرے۔
آمین
:replythanks:
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks