بچوں کے رویوں پر والدین کے اثرات

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
3:15 AM
Threads
275
Messages
1,162
Reaction score
1,898
Points
703
Gold Coins
2,489.22
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
11:15 PM
Threads
1,354
Messages
7,659
Reaction score
6,958
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
112.44
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
بچوں پر والدین کے رویوں کا اثر
نئے ماں باپ بننے والے افراد جب دوسرے لوگوں سے یہ سنتے ہیں کہ ان کا بچہ ماں پر گیا ہے تو وہ خوش ہوتے ہیں لیکن جب بچہ بڑا ہو جاتا ہے اور انہیں یہی جملہ سننے کو ملے تو وہ کبھی کبھار اسے ’بے عزتی‘ بھی سمجھ لیتے ہیں۔

حث کے دوران یہ جملہ،’ تم بالکل اپنی ماں پر گئے ہو‘ کبھی کبھار ایسا بھی لے لیا جاتا ہے کہ جیسے یہ کہا جا رہا ہو،’ تم سے بات کرنا مشکل ہے‘۔ لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایسا کیوں سمجھا جاتا ہے؟ یہ کیوں سمجھا جاتا ہے کہ بچہ اپنی ماں سے صرف بری خصوصیات ہی سیکھتا ہے؟

جرمن ماہر نفسیات دان Roland Raible اس سوال کا جواب دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ گھر کا ماحول بچے کی ابتدائی زندگی پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ بچوں کی ایک بڑی تعداد اپنے بچپن کا زیادہ تر وقت اپنی ماں کے ساتھ گزارتی ہے، اس لیے بچے بالخصوص لڑکیاں اپنی ماں کی عادات اختیار کر لیتی ہیں۔

Raible کہتے ہیں کہ شعوری طور پر بچے کو اس بات کا احساس نہیں ہوتا ہے لیکن بعد میں بچے زیادہ تر اپنی ماں کی طرح ہی عمل کرتے ہیں۔ تاہم وہ یہ ہر گز نہیں کہتے کہ بچہ اپنی ماں سے صرف بری عادات ہی سیکھتا ہے۔

ایک اور نفسیات دان Joerg Wesner اسی امر کی مزید تشریح کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ بچے اپنے والدین سے صرف بری خصوصیات ہی نہیں سکیھتے بلکہ والدین اپنے بچوں کے رویوں کو نکھارتے یا بگاڑتے ہیں۔ ان کے مطابق یہ سارا ایک لاشعوری عمل ہے، جس کا بچوں کو بالکل بھی احساس نہیں ہوتا۔

اسی بحث کو آگے بڑھاتے ہوئے Raible کہتے ہیں کہ بچے کا ماں کی طرح عمل کرنا کوئی بری بات نہیں ہے لیکن اس عمل کو مشروط نہیں کرنا چاہیے۔ وہ مزید کہتے ہیں کہ یہ جملہ کہ ’کوئی بالکل اپنی ماں کی طرح کی عادات رکھتا ہے‘، معاشرتی سطح پر ایسے دیکھا جاتا ہے کہ جیسے وہ شخص سمجھدار نہیں ہوا ہے۔ نفسیات دانوں کے مطابق ایسے تمام مفروضات اور روزمرہ کے جملے دراصل صنفی امتیاز کی وجہ سے بولے اور سنے جاتے ہیں۔ لیکن وہ کہتے ہیں کہ معاشرتی سطح پر ماں اور باپ کی خصوصیات کو جیسے بھی دیکھا جائے لیکن یہ ایک حقیقت ہے کہ بچے میں ماں باپ کی جھلک نمایاں ہوتی ہے۔

Raible کے بقول فلسفیانہ سطح پر اقدار کے جتنے بھی ماڈل ہیں، ان کا بغور مطالعہ کرنے سے معلوم ہوتا ہے کہ ہر منفی قدر میں ایک مثبت پہلو بھی پنہاں ہوتا ہے۔ جیسے کہ لالچ کا کفایت شعاری میں بدلنا یا پھر بہت زیادہ صفائی کے شوق کا منظم زندگی میں ڈھل جانا۔ لیکن وہ کہتے ہیں کہ والدین کا بچوں کی زندگی پر اثر بہت زیادہ ہوتا ہے لیکن اس کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ بچے اپنے والدین سے صرف بری عادات ہی سیکھتے ہیں۔​
 

Abu Dujana

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Expert
Popular
Helping Hands
Joined
Apr 25, 2018
Local time
3:15 AM
Threads
81
Messages
963
Reaction score
1,360
Points
452
Location
Karachi, Pakistan
Gold Coins
514.47
ما شا ء اللہ۔۔
بچوں کی نفسیات اور والدین کی رویوں کا بچوں پر اثرات بہت اچھے طریقے سے تحریر کئے ہیں۔۔

شکریہ اشتراک کا۔۔
:)
 

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
3:15 AM
Threads
275
Messages
1,162
Reaction score
1,898
Points
703
Gold Coins
2,489.22
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
بچوں پر والدین کے رویوں کا اثر
نئے ماں باپ بننے والے افراد جب دوسرے لوگوں سے یہ سنتے ہیں کہ ان کا بچہ ماں پر گیا ہے تو وہ خوش ہوتے ہیں لیکن جب بچہ بڑا ہو جاتا ہے اور انہیں یہی جملہ سننے کو ملے تو وہ کبھی کبھار اسے ’بے عزتی‘ بھی سمجھ لیتے ہیں۔

حث کے دوران یہ جملہ،’ تم بالکل اپنی ماں پر گئے ہو‘ کبھی کبھار ایسا بھی لے لیا جاتا ہے کہ جیسے یہ کہا جا رہا ہو،’ تم سے بات کرنا مشکل ہے‘۔ لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایسا کیوں سمجھا جاتا ہے؟ یہ کیوں سمجھا جاتا ہے کہ بچہ اپنی ماں سے صرف بری خصوصیات ہی سیکھتا ہے؟

جرمن ماہر نفسیات دان Roland Raible اس سوال کا جواب دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ گھر کا ماحول بچے کی ابتدائی زندگی پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ بچوں کی ایک بڑی تعداد اپنے بچپن کا زیادہ تر وقت اپنی ماں کے ساتھ گزارتی ہے، اس لیے بچے بالخصوص لڑکیاں اپنی ماں کی عادات اختیار کر لیتی ہیں۔

Raible کہتے ہیں کہ شعوری طور پر بچے کو اس بات کا احساس نہیں ہوتا ہے لیکن بعد میں بچے زیادہ تر اپنی ماں کی طرح ہی عمل کرتے ہیں۔ تاہم وہ یہ ہر گز نہیں کہتے کہ بچہ اپنی ماں سے صرف بری عادات ہی سیکھتا ہے۔

ایک اور نفسیات دان Joerg Wesner اسی امر کی مزید تشریح کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ بچے اپنے والدین سے صرف بری خصوصیات ہی نہیں سکیھتے بلکہ والدین اپنے بچوں کے رویوں کو نکھارتے یا بگاڑتے ہیں۔ ان کے مطابق یہ سارا ایک لاشعوری عمل ہے، جس کا بچوں کو بالکل بھی احساس نہیں ہوتا۔

اسی بحث کو آگے بڑھاتے ہوئے Raible کہتے ہیں کہ بچے کا ماں کی طرح عمل کرنا کوئی بری بات نہیں ہے لیکن اس عمل کو مشروط نہیں کرنا چاہیے۔ وہ مزید کہتے ہیں کہ یہ جملہ کہ ’کوئی بالکل اپنی ماں کی طرح کی عادات رکھتا ہے‘، معاشرتی سطح پر ایسے دیکھا جاتا ہے کہ جیسے وہ شخص سمجھدار نہیں ہوا ہے۔ نفسیات دانوں کے مطابق ایسے تمام مفروضات اور روزمرہ کے جملے دراصل صنفی امتیاز کی وجہ سے بولے اور سنے جاتے ہیں۔ لیکن وہ کہتے ہیں کہ معاشرتی سطح پر ماں اور باپ کی خصوصیات کو جیسے بھی دیکھا جائے لیکن یہ ایک حقیقت ہے کہ بچے میں ماں باپ کی جھلک نمایاں ہوتی ہے۔

Raible کے بقول فلسفیانہ سطح پر اقدار کے جتنے بھی ماڈل ہیں، ان کا بغور مطالعہ کرنے سے معلوم ہوتا ہے کہ ہر منفی قدر میں ایک مثبت پہلو بھی پنہاں ہوتا ہے۔ جیسے کہ لالچ کا کفایت شعاری میں بدلنا یا پھر بہت زیادہ صفائی کے شوق کا منظم زندگی میں ڈھل جانا۔ لیکن وہ کہتے ہیں کہ والدین کا بچوں کی زندگی پر اثر بہت زیادہ ہوتا ہے لیکن اس کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ بچے اپنے والدین سے صرف بری عادات ہی سیکھتے ہیں۔​
:replythanks:
 

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
3:15 AM
Threads
275
Messages
1,162
Reaction score
1,898
Points
703
Gold Coins
2,489.22
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
ما شا ء اللہ۔۔
بچوں کی نفسیات اور والدین کی رویوں کا بچوں پر اثرات بہت اچھے طریقے سے تحریر کئے ہیں۔۔

شکریہ اشتراک کا۔۔
:)
:replythanks:
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks