حج اسلامی عبادات کا پانچواں رُکن

PakArt UrduLover

Thread Starter
in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
4:51 AM
Threads
1,354
Messages
7,659
Reaction score
6,964
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
115.18
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited

حج اسلامی عبادات کا پانچواں رُکن
اسلام نے اتحادوقومی اور اخوت باہمی پر بڑا زور دیا ہے اور جس قدر اخوت واتحاد کسی قوم میں زیادہ ہو گا اسی قدر وہ قوم دنیا میں زیادہ ترقی کر سکتی ہے۔یہی وجہ ہے کہ اسلامی عبادتوں میں عام طور پر ایک قومی اجتماع کا رنگ نظر آتاہے۔

اسلام نے اتحادوقومی اور اخوت باہمی پر بڑا زور دیا ہے اور جس قدر اخوت واتحاد کسی قوم میں زیادہ ہو گا اسی قدر وہ قوم دنیا میں زیادہ ترقی کر سکتی ہے۔یہی وجہ ہے کہ اسلامی عبادتوں میں عام طور پر ایک قومی اجتماع کا رنگ نظر آتاہے۔نماز باجماعت جمعہ اور عید ین کی نمازوں میں اسی لئے ایک مجمع کثیر جمع ہوکر فریضہ عبادت بجا لاتے ہیں لیکن ان سب سے زیادہ بڑا مجمع جہاں تمام دنیا کے مسلمان جمع ہوتے ہیں حج ہے جہاں رومی،شامی،ترکی ،ایرانی،غزنی،چینی ،جاپانی،ہندوستانی اورپاکستانی غرض ہر سرزمین کے مسلمان ایک ہی لباس اور ایک ہی غرض کے لئے جمع ہوکر وحدت قومی کا ایک دلکش منظر پیش کرتے ہیں۔
دنیا میں کامیابی وظفر کے لئے سفر کی ضرورت ہے اس لئے قرآن پاک نے بار بار اپنے ماننے والوں کو سیروفی الارض کا حکم دیا ہے جس طرح دنیا کی باقی قومیں سفر کی وجہ سے کمال حاصل کر رہی ہیں اسی طرح اسلام نے اپنے پیروں کاروں کے لئے بھی کم از کم ایک مرتبہ تو سفر ضرور فرض کردیا ہے تاکہ جہاں وہ دینی وروحانی برکات سے فائدہ اٹھاتے ہیں وہاں دنیاوی اور جسمانی لحاظ سے بھی علمی معلومات اور تمام واقفیت کا ذخیرہ بہم پہنچائیں مگر ہر شخص چونکہ سفر نہیں کر سکتا اس لئے اسلام نے اس کے لئے استطاعت کی بھی شرط لگادی ہے۔


دنیا کے تمام پیشوں سے سب سے کامیاب پیشہ تجارت ہے اور تجارت میں کامیابی حاصل کرنے کے لئے سفر اور سفر کو کامیاب بنانے کے لئے تجارت کی ضرورت ہے پس اگر حج کے سفر میں اگر حاجی لوگ تجارتی اشیاء ہمراہ لے جائیں اور ان کی تجارت کرتے رہیں تو کوئی گناہ نہیں بلکہ سونے پر سہا گہ ہے اور ایام حج سے فارغ ہو کر بھی تجارت کر سکتے ہیں اور اللہ تعالیٰ نے تم پر اس کا کوئی گناہ نہیں کہ تم اللہ تعالیٰ کا فضل تلاش کرو۔
کا حکم․․․․․․․․․․تجارت کی عام اجازت دے دی ہے اور اس آیت میں فضل سے مراد تجارت ہی ہے۔الغرض تمام مسلمانوں کو متحدومربوط کرنے آپس میں تعارف وتعاون کرانے ایک دوسرے کے حالات سے آگاہ رہنے انہیں ایک مرکز کے ساتھ وابستہ کرنے اور تمام مسلمانوں کو ایک شیراز میں منسلک کرنے کا واحد ذریعہ صرف حج بیت اللہ ہے ۔
تمام اہل بصیرت کا اس امر پر اتفاق ہے کہ اسلام میں جس طرح حلقہ بگوشاں اور پیرؤں کی اُخروی فلاح ونجات کا ضامن ہے ۔
ٹھیک اسی طرح اس کی دنیاوی بہبودخیروبرکت اور ترقی وعروج کا کفیل ہے اور اُخروی عزت وغلبہ کا پیغام ہونے کے ساتھ ساتھ ان کی بین الاقوامی عزت اور دنیاوی ارتقاء کا سر چشمہ ہے۔اگر ہم تاریخ اسلام کے اس دورکاتصور کریں جبکہ قومیں مسلمانوں کے افراد سے تھراتی تھیں۔تاج وتخت کے مالک ان سے لرزتے تھے۔مسلمانوں کے نام سے بڑے بڑے مغرور سرکش کا نپ اٹھتے تھے۔
ان کی حیرت انگیز قوت اور طاقت نے قیصر وکسریٰ کے تخت اُلٹ دیئے۔دنیا کی سلطنتوں کے نقشے بدل دیئے۔
مسلمانوں کا عہدحکومت اور طریقہ حکمرانی آج بھی متمدن اورمہذب قوموں کے لئے اُسوہ اور نمونہ ہے لیکن آج اس جلیل اقدار اور خیر الامم اسلامی قوم کا یہ حال ہے کہ ان کا وجود جو غیروں کے لئے باعث نفرت ہے۔بے وزن بے وقار ذلیل وخوار کمزور اور پست ہمت اور غیر مہذب ومحکوم اور غلام قومیں بھی ان انتہائی ذلیل سمجھتی ہیں۔
ان کو کچلنے اور فنا کرنے کے درپے ہیں اخلاق ثواب معاشرت ،تمدن غیروت وصحیت اور دوسرے اسلامی فضائل اور مذہبی شعار مٹ جانے کے بعد اسلامی اُمت کا وجودنہ ہونے کے برابر ہے۔
جس کی وجہ سوائے اس کے کچھ نہیں کہ ہم سینکڑوں دنیاوی کاروبار کی تکمیل جس بددلی سے کرتے ہیں وہی بدلی ارکان دین کی بجا آوری میں ہمارا پیچھا نہیں چھوڑتی۔ہم نماز پڑھتے ہیں مگر اس کے نصب العین کوپیش نہیں رکھتے روزے رکھتے ہیں مگر اس کے حقیقی مقصد کی طرف گاہ نہیں رکھتے۔
زکوٰة دیتے ہیں مگر صحیح اسلامی طریق پر نہیں۔حج کرتے ہیں مگر اس کے پیداشدہ نتائج سے مستفیض نہیں ہوتے۔حج سے اگر کوئی مذہبی اور روحانی فائدہ حاصل نہیں ہوتے تو دنیا ہی کماتے ہیں ۔دنیاوی مصلحتوں کے سر انجام ہی میں حج سے کام لیتے ہیں۔تجارتی اور علمی فوائد ہی حاصل کرتے ہیں۔
حج تبادلہ خیالات کا ایک بہتر وسیلہ ہے اگر ہم اس سے فائدہ اٹھائیں واپس آکر اپنے اپنے حلقے میں اچھے اچھے خیالات پھیلائیں۔
مذہبی مصالح وضروریات حاضرہ پر گفتگو کریں اور ضروری قرار داد کے بعد اسے عملی جامہ پہنائیں حالانکہ اس وقت من حیث القوم مسلمانوں کی جو حالت ونینا بھر میں ہورہی ہے اور جس پستی میں ہم پڑ ے ہوئے ہیں اس پیش نظر رکھ کر حج کے افادیت سے کام لینا مسلمانوں کا اولین فرض ہے۔
کاش کے مسلمان خواب غفلت سے بیدار ہوں اور اجتماع حج سے وہ کام لیں جو اس سے لیا جاسکتاہے۔
اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ ہمیں کما حقہ فریضہ حج ادا کرنے کی توفی بخشے ۔آمین ثم آمین
 

Doctor

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Joined
Apr 25, 2018
Local time
9:51 AM
Threads
849
Messages
12,361
Reaction score
14,315
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,445.33
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks