زبانیں کیسے بنتی ہیں ؟؟؟؟

Afzal339

Thread Starter
★★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Dynamic Brigade
Designer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Messages
513
Reaction score
770
Points
562
Gold Coins
76.50
Silver Coins
751.78
Diamonds
0.00
اس تھریڈ میں آپ پڑھیں گے کہ ذیل میں دیے گئے الفاظ کی بگڑی شکل اور اس کی موجودہ زبان کون سی ہے جب کہ اصل شکل سے مراد یعنی وہ لفظ اصل میں کیا تھا اور پہلے اس کی زبان کون سی تھی ۔ مثلا لفظ "اورنج" جو انگریزی میں مستعمل ہے یہ عربی لفظ "نارنج" سے بنا ہے اور لفظ "نارنج" فارسی لفظ" نارنگ" سے بنا ہے الفاظ کا یہ سفر بڑا دلچسپ ہے ۔ باقی تھریڈ پڑھیں تو یقینا مزا آئے گا اور اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔
*************​


بگڑی شکل اور زبان ۔۔۔۔۔۔فہرست1۔۔۔۔۔ا
صل شکل اور زبان ۔۔۔۔۔بگڑی شکل اور زبان ۔۔۔۔ فہرست2۔۔۔۔اصل شکل اور زبان

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اورنج اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نارنج اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نارنج اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نارنگ اور فارسی

الکحل اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔الکووحل اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کینڈی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قند اور سنسکرت یا فارسی

پیراڈائز اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فردوس اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔شوگر اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔شکر اور عربی

کیلف اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خلیفہ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ٹیرف اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔تعریف اور عربی

اوٹومن اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔عثمان اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ڈیوڈ اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔داؤد اور عبرانی

اضحاق اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اسحاق اور عبرانی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ابرہام اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ابراہیم اور عبرانی

کیرؤن اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کارواں اور فارسی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کرمسن اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قرمزی اور عربی

کافی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کاوہ اور پشتو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کہوہ یا قہوہ ترکی اور عربی ۔۔۔۔۔۔ کاوہ اور پشتو

ایڈوبی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔الطوب اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔سیرپ اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔شراب اور عربی

جنگل اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ځنګل(زنگل) اور پشتو۔۔۔۔۔۔۔شاول اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔شال اور فارسی

بنگلی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بنګړي(بنگڑی) اور پشتو۔۔۔لوٹ اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔ لوټ(لوٹ) اور پشتو

فادر اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پدر اور فارسی۔۔۔۔۔۔۔۔مدر اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مدر اور فارسی

پتاسنسکرت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پدر اور فارسی۔۔۔۔۔۔۔۔۔ماتا اور سنسکرت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مدر اور فارسی

اکادمی اورعربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔اکیڈمی اور یونانی۔۔۔۔۔۔۔کھکی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خاکی اور فارسی

ڈاٹر اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔دختر اور فارسی ۔۔۔۔۔۔۔۔چیتا اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔چیتا اور ہندی

کیٹ اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قطہ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔کیجول اور امریکن ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔جدول اور عربی

شیڈول اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔جدول اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔تھری اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔دری اور پشتو

مرر اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مراۃ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔فور اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔څلور(سلور) اور پشتو

کینڈل اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قندیل اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔ايٹ اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اتا اور پشتو

الجبرا اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔الجبر اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ٹو اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔دوہ اور پشتو

صوفہ اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔صفۃ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔دس اور اردو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لس اور پشتو

سفاری اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔سفر اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔ممی اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔موم اور فارسی

کاٹن اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور قطن اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔پاجاما اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پائجاما اور پشتو

میگزین اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مخزن اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔لیمن اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لیمون عربی اور فارسی

خاتو اور جانگلی پنجابی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خاتون اور ترکی۔۔۔۔۔۔۔۔۔کیلبر اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قالب اور عربی

میٹریس اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مطارہ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کفن اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کوفینو اوریونانی

ہوف اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خف اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔الکیمی(کیمسٹری)اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔الکیمیا اور عربی

ایڈمرل اور انگلش۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔امیر الرحل اور عربی یا امیر البحر اور عربی

زاغ اور عربی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کاغ اور پشتو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کاگ اور ہندی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کاغ اور پشتو

الیکسیر اور انگلش ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔الاکسیراور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لطیفہ اور اردو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لطیفہ اور پشتو

بابر فارسی اور اردو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ببر اورپشتو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مہمان اور فارسی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ميلمااور پشتو

جائے اور اردو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ځائي(زائی) اور پشتو۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جان اور اردو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ځان (زان) اور پشتو

پلنگ اور فارسی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پړانګ(پڑانگ) اور پشتو۔۔۔۔۔بونی اور اردو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بوڼي(بونی)اور پشتو

کابل اور پشتو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کعبہ اور عربی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مچلکہ ،مچلکا اور اردو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔مچلکا،مجلکا، مچلگہ، موچلکااور پشتو

شاخ اور فارسی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ښاخ(خاخ)اور پشتو۔۔۔۔۔۔۔۔زاد اور فارسی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ذات اور پشتو


 
Last edited by a moderator:

Doctor

★★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Most Helpful
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Messages
5,714
Reaction score
7,020
Points
2,627
Location
Rawalpindi - Punjab - Pakistan
Gold Coins
5.98
Silver Coins
477.40
Diamonds
0.00
Thread Highlight Unlimited
Single Thread Highlight for 1 Week.
Change Username Style.
:goodpost:
اگر مختصر پیش لفظ یا دیباچہ تحریر کردیتے تو سمجھنے میں زیادہ آسانی رہتی ورنہ تھریڈ کا عنوان دیکھ کر تو کچھ دوست یہاں کھگے کھانے کے چکر میں بھی آسکتے ہیں
:rose::rose::rose::rose::rose:
 

Afzal339

Thread Starter
★★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Dynamic Brigade
Designer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Messages
513
Reaction score
770
Points
562
Gold Coins
76.50
Silver Coins
751.78
Diamonds
0.00
:goodpost:
اگر مختصر پیش لفظ یا دیباچہ تحریر کردیتے تو سمجھنے میں زیادہ آسانی رہتی ورنہ تھریڈ کا عنوان دیکھ کر تو کچھ دوست یہاں کھگے کھانے کے چکر میں بھی آسکتے ہیں
:rose::rose::rose::rose::rose:
اب چیک کریں
 

PakArt UrduLover

Staff member
★★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Dynamic Brigade
ITD Express
Designer
Expert
Writer
Joined
May 9, 2018
Messages
4,662
Reaction score
3,762
Points
2,237
Location
Manchester U.K
Gold Coins
434.30
Silver Coins
12,599.38
Diamonds
1.00
کیا دنیا کی ساری زبانیں ایک زبان سے نکلی ہیں؟
B3564419-3945-4EE0-AF3F-2E70ECEB630C_w1023_r1_s.jpg
کہا جاتا ہے کہ آدم علیہ السلام اور ان کی قوم ایک ہی زبان بولتی تھی۔ تاہم کچھ عرصے بعد انسان نے ایک مینار بنا کر آسمان تک پہنچنے کی کوشش کی، جسے مینارِ بابل کہا جاتا ہے۔ خدا نے اس گستاخی کی یہ سزا دی کہ مینار کی مختلف منزلوں پر رہنے والوں کی زبانیں مختلف کر دیں تا کہ وہ ایک دوسرے کی بات نہ سمجھ سکیں۔

تاہم جدید ماہرینِ لسانیات کا خیال ہے کہ زبانوں میں عقل کو چکرا دینے والا صوتی اور نحوی تنوع ہزاروں سال کے دوران رونما ہوا ہے۔ جب کہ چند ماہرینِ لسانیات ایسے بھی ہیں جو کہتے ہیں کہ اس تمام تر رنگا رنگی یا انتشار کے باوجود ان ساری کی ساری زبانوں کے ڈانڈے ایک ہی زبان سے ملتے ہیں۔
آخر یہ ماہرین اس نتیجے تک کیسے پہنچے؟ ہم نے یہی سوال میرٹ رُولن (Merritt Ruhlen) کے سامنے رکھا جو بعض حلقوں کے مطابق اس وقت دنیا کے سب سے بڑے ماہرِ لسانیات ہیں۔ موصوف کیلی فورنیا میں واقع سٹینفرڈ یونی ورسٹی سے وابستہ ہیں اور لسانیات کے موضوع پر کئی کتابیں تحریر کر چکے ہیں۔ میرٹ رولن اور ان کے ساتھی ماہرینِ لسانیات تو ضرور ہیں لیکن وہ لسانی تحقیق کے لیے دوسرے سائنسی شعبوں سے استفادہ کرنے سے دریغ نہیں کرتے۔ انھوں نے ابتدائی زبان کا کھوج لگانے کے لیے جدید جینیات اور علمِ آثارِ قدیمہ سے بھی بھرپور مدد لی ہے۔
میرٹ رولن کہتے ہیں کہ جدید جینیاتی تحقیق سے معلوم ہوتا ہے کہ تقریباً پچاس ہزار برس قبل انسانوں کا ایک چھوٹا سا گروہ مشرقی افریقہ سے باہر نکلا اور دیکھتے ہی دیکھتے دنیا بھر میں پھیل گیا۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ گروہ ایک ہی زبان بولتا تھا اور لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ جیسے علاقائی اور موسمی تغیرات کے زیرِ اثر انسانی رنگ روپ اور خد و خال میں تبدیلیاں آتی گئیں، ویسے ہی یہ ابتدائی زبان مختلف خطوں میں جا کر بدلتے بدلتے ہزاروں مختلف اور باہم ناقابلِ فہم زبانوں میں ڈھلتی گئی۔

میرٹ رولن

میرٹ رولن

اس بات کی وضاحت کرتے ہوئے رولن نے کہا کہ اردو، ہندی، گجراتی، مراٹھی وغیرہ ایک ایسے لسانی گروہ سے تعلق رکھتی ہیں جسے ’اِنڈک‘ گروہ کہا جاتا ہے۔ انڈک بذاتِ خود ایک بڑے خاندان ’انڈویوروپین‘سے تعلق رکھتا ہے۔ اسی طرح انڈو یورپین خاندان زبانوں کے ایک اور خاندان سے مشابہت رکھتا ہے جسے ’یورالک‘ خاندان کہا جاتا ہے۔ اس خاندان میں ترکی، منگولیائی، ہنگیریائی، اور فنش وغیرہ شامل ہیں۔ ان دونوں خاندانوں کو ملا کر ’یوروایشیاٹک خاندان‘ کہا جاتا ہے۔
رولن کہتے ہیں کہ دنیا کی تمام زبانوں کو یورو ایشیاٹک کی طرح کے 12 بڑے خاندانوں میں تقسیم کیا جا سکتا ہے۔ اور دل چسپ بات یہ ہے کہ یہ 12 خاندان بھی ایک دوسرے سے بالکل الگ تھلگ جزیرے نہیں ہیں بلکہ ان کی کئی خصوصیات ایک دوسرے سے ملتی ہیں، جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ یہ سارے خاندان شروع میں ایک تھے۔
اس قسم کی تحقیق ایسی ہی ہے جیسے کوئی درخت کے پتوں سے سفر کا آغاز کرے اور ڈنٹھلوں، ٹہنیوں، ڈالیوں اور شاخوں سے ہوتا ہوا تنے تک پہنچنے کی کوشش کرے۔
پروفیسر روُلن اور ان کے استاد جوزف گرین برگ اس ضمن میں ایک لفظ ’ٹیک‘(tik) کی مثال پیش کرتے ہیں۔ یہ لفظ دنیا کے اکثر لسانی خاندانوں میں پایا جاتا ہے اور اس کا مطلب ہر جگہ کم و بیش ایک جیسا رہتا ہے۔ مذکورہ بالا صاحبان کا خیال ہے کہ اس لفظ کا ابتدائی مطلب تھا ’انگلی‘، لیکن بعد میں اسی لفظ کا ماخوذ مطلب ہو گیا، ’ایک‘ یا ’صرف۔‘
اب ذرا دنیا بھر میں اس ایک لفظ کی ’کثرت میں وحدت‘ کی جلوہ آرائیوں کی چند عجیب و غریب مثالیں ملاحظہ کیجیئے
Please, Log in or Register to view URLs content!
 
Top

AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock
No Thanks