ہم نے جب درد بھری اپنی کہانی لکھی کرامت علی کرامت

PakArt UrduLover

Thread Starter
in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
12:56 AM
Threads
1,354
Messages
7,659
Reaction score
6,964
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
115.03
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
ہم نے جب درد بھری اپنی کہانی لکھی
شاعر کرامت علی کرامت


ہم نے جب درد بھری اپنی کہانی لکھی
لوگ کہنے لگے روداد پرانی لکھی
میں نے اک پیڑ سمندر کے جزیرے سے لیا
اور چٹان پہ پانی کی روانی لکھی
اجنبی طرز لئے میں نہیں آیا ہوں یہاں
داستاں اپنی تمہاری ہی زبانی لکھی
چشم محبوب کو نرگس کا لقب تو نے دیا
میں نے شعروں میں مگر ''رات کی رانی'' لکھی
کون سا وقت عمل کا ہے جوانی کے سوا؟
نیند کب آتی ہے؟ پوچھا تو جوانی لکھی
رات جب آئی تو دن بھر کا فسانہ لکھا
جب چلی باد سحر شام سہانی لکھی
باغ فردوس کی لوری میں سناتا کیسے؟
مری قسمت میں تھی آشفتہ بیانی لکھی
خشک تھا میرا قلم کچھ نہیں لکھ پاتا تھا
لکھنے بیٹھا تو بڑی رام کہانی لکھی
تم نے جب حرف کو خوابوں کا سفر کہہ ڈالا
میں نے بھی لفظ کی تعبیر معانی لکھی
نرم و نازک تھا کرامتؔ ترے شعروں کا مزاج
وقت پڑنے پہ مگر شعلہ بیانی لکھی

 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks