کالی بلّی سے کالے کوّے تک

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
4:31 PM
Threads
269
Messages
1,149
Reaction score
1,888
Points
703
Gold Coins
2,482.11
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
ہمارے معاشرے میں توہم پرستی اور ضعیف الاعتقادی جیسے مسائل عام ہیں۔ خصوصاً عورتوں میں توہم پرستی اور بدشگونی عام ہے بلکہ یہ ایک قسم کی ذہنی بیماری سے کم نہیں۔ جاہل یا بے شعور ہی نہیں پڑھی لکھی عورتیں بھی ایسی باتیں کرتی ہیں جن کا کوئی سر پیر نہیں ہوتا۔ یہ حقیقت سے دور اور محض ذہنی اختراع ہوسکتی ہے جسے مسترد کرنے اور ایسے ہر عمل کی حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے۔ ایسی غیرمنطقی اور بے سر و پا باتیں بعض اوقات نہایت تکلیف دہ اور سنگین صورتِ حال بھی پیدا کر دیتی ہیں اور ایسے واقعات قارئین کے بھی علم میں ہوں گے۔
کالی بلی کا سامنے سے گزر جانا، کوے کا منڈیر پر آنا، گھر کے کسی فرد کے سفر پر جانے کے بعد جھاڑو نکالنا، مخصوص دن کپڑا کاٹنے کی ممانعت اور اس طرح کی بہت سی باتیں بدشگونی تصور کی جاتی ہیں۔ ان کے علاوہ ہتھیلی یا تلوے میں خارش، آنکھ کا پھڑکنا، مخصوص مہینوں اور دنوں کے بارے میں نحوست کا تصور، مخصوص رنگ کا لباس خوشی کے کسی موقع پر پہننا بھی مسئلہ بن جاتا ہے۔

عموماً کالی بلی کا راستے میں آجانا یا کسی کو سفر پر نکلنے کے بعد پیچھے سے پکارنا بہت زیادہ بدشگونی کی علامت سمجھا جاتا ہے، اور اس کو کام کے بگڑنے کا پیش خیمہ سمجھا جاتا ہے۔ دور جہالت میں پرندوں پر بہت زیادہ اعتماد کیا جاتا تھا اور اسی طرح کسی کام کے کرنے یا نہ کرنے پر فال نکالنا، قرعہ ڈالنا اور تیر پھینکنے کے رواج عام تھے۔ آج کے دور میں بھی چیزوں کے الٹ پھیر بدل گئے ہیں، لیکن اب بھی لو گ بہت ساری چیزوں میں توہمات کا شکار ہیں اور بد شگونی کے قائل ہیں۔

ہتھیلی میں خارش ہونا دولت آنے کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ اسی طرح تلوے میں خارش ہونا سفر درپیش ہونے کی علامت گردانا جاتا ہے۔ کسی مخصوص چیز کا نام لینا جیسے الو،کھاٹ وغیرہ کے الفاظ کو منحوس سمجھا جاتا ہے۔ بعض لوگ دائیں آنکھ کا پھڑکنا مصیبت اور بائیں آنکھ کا پھڑکنا خوشی کی علامت تصور کرتے ہیں۔

مخصوص مہینوں اور دنوں کو بہت اس حوالے سے بہت اہمیت دی جاتی ہے۔ ہمارے ہاں بعض لوگ مخصوص دن یا مہینے کو مبارک اور منحوس سمجھ کر اپنی کوئی بھی تقریب کا اہتمام کرتے ہیں۔ بعض مخصوص دنوں یا مہینے میں خصوصاً شادی کرنے پر کہا جاتا ہے کہ وہ کام یاب نہیں ہوگی۔ اسی طرح مخصوص اعداد سے بھی قسمت کو جوڑا جاتا ہے اور اسی کے مطابق مختلف کام انجام دیے جاتے ہیں۔ کسی خوشی کی تقریب کے لیے تاریخ کے چناؤ میں احتیاط کی جاتی ہے۔

مکمل کالے اور سفید رنگ کے ملبوسات زیب تن کرنے کے حوالے سے بھی ہم توہم پرست واقع ہوئے ہیں۔ رنگوں کو بھی غم، پریشانی اور فقر کی علامت اور خوش بختی یا نحوست کی علامت کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔

اسی طرح بعض گھرانوں میں کسی کے اچانک آنے سے ذہنوں میں نقصان اور پریشانی کے خدشات ابھر آتے ہیں۔ اگر خدانخواستہ نئی نویلی دلہن کے آنے کے فورا بعد کوئی نقصان یا پریشانی گھر میں ہوجائے تو اس بیچاری کو ’’زرد قدم‘‘ کہہ دیا جاتا ہے اور پھر ساری عمر وہ اسے بھگتتی رہتی ہے۔ اسی طرح بعض گھرانوں میں پرندے اور جانور پالنے سے متعلق بھی عجیب و غریب باتیں سننے کو ملتی ہیں۔ یہ جانور اور پرندے کسی کو منحوس تو کسی کی نظر میں کوئی خوش بختی کی علامت ہوتے ہیں۔ نئی جگہ رہائش کے سلسلے میں بھی لوگ خصوصاً عورتیں وہم کا شکار نظر آتی ہیں۔ اگر نئے گھر میں کسی نوعیت کا کوئی مسئلہ، حادثہ پیش آ گیا تو گھر بدلنے میں دیر نہیں کی جاتی۔

کوئی چیز، شخص اور جگہ وغیرہ بخت آور یا منحوس ہوسکتی ہے یا نہیں، لیکن یہ ضرور طے ہے کہ اگر ہمارا ایمان اور اپنی ذات پر بھروسا کم ہو تو ایسی ہی باتیں سوجھتی ہیں۔ ایک زمانہ تھا جب انسان کے لیے جدید ذرایع اور وسائل نہ تھے، عقل کے بجائے وہ کہانیوں، من گھڑت باتوں اور ماورائی یا اساطیر سے بہت متاثر ہوتا تھا، لیکن آج سائنس کے میدان میں ترقی کے بعد ہر ذی شعور اپنی عقل اور شعور سے کام لے تو ایسی بہت سی خرافات اور فضولیات سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے جس سے نہ صرف ہم بلکہ ہمارے وہمی ہونے کی وجہ سے دوسرے بھی متاثر ہو رہے ہیں۔
 

ناعمہ وقار

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Champion
Writer
Popular
Mysterious
Joined
May 8, 2018
Local time
4:31 PM
Threads
111
Messages
3,145
Reaction score
4,598
Points
943
Location
اسلام آباد - پاکستان
Gold Coins
856.57
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Single Thread Highlight for 1 Week.
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
بہت عمدہ
واقعی ایسے بہت سے معاملات ہیں ، جہاں انسانی عقل دلیل سوچتی ہی رہ جاتی ہے ، لیکن ہمارے گھروں میں ان باتوں کو اہمیت دی جاتی ہے
دراصل ، جو باتیں مختلف گھروں میں رائج ہوتی ہیں ، انکا کوئی نہ کوئی بیک گراؤنڈ ہوتا ہے، جیسے کسی ایک مہینے میں ہونی والی متعدد شادیاں ناکام ہو جائیں تو سمجھا جاتا ہے کہ شاید یہ مہینہ ہی ہمیں راس نہیں آتا
یا پھر رنگوں کے حوالے سے کافی لوگوں کو کانشیئس دیکھا ہے ، ہوتا صرف یہی ہے کہ کچھ برے واقعات میں کسی فرد نے کوئی ایک خاص رنگ پہن رکھا ہوتا ہے تو وہ رنگ منحوس مان لیا جاتا ہے
اب یہ تمام توہمات یا واہمے نسل در نسل آگے چل رہے ہیں اور گھر کے بڑے بوڑھے تو ان سے اختلاف بھی برداشت نہیں کرتے ، تو اس کا بہتر حل یہی ہے کہ ان سے بحث نہ کی جائے اور اگر انکی بات کو اہمیت دیتے ہوئے کسی رنگ یا مہینے سے ہم پرہیز کریں بھی تو ہمارے نیت صرف اپنے بزرگوں کی بات ماننا ہونا چاہیئے اور اس بات کا یقین ہونا چاہیئے کہ ہم پہ جو بھی آزمائش یا اچھا برا وقت آتا ہے ، سب صرف ہماری تقدیر ہوتا ہے، جو اللہ نے ہمارے لیئے لکھ دی ہے-
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
12:31 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.84
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
4:31 PM
Threads
269
Messages
1,149
Reaction score
1,888
Points
703
Gold Coins
2,482.11
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
بہت عمدہ
واقعی ایسے بہت سے معاملات ہیں ، جہاں انسانی عقل دلیل سوچتی ہی رہ جاتی ہے ، لیکن ہمارے گھروں میں ان باتوں کو اہمیت دی جاتی ہے
دراصل ، جو باتیں مختلف گھروں میں رائج ہوتی ہیں ، انکا کوئی نہ کوئی بیک گراؤنڈ ہوتا ہے، جیسے کسی ایک مہینے میں ہونی والی متعدد شادیاں ناکام ہو جائیں تو سمجھا جاتا ہے کہ شاید یہ مہینہ ہی ہمیں راس نہیں آتا
یا پھر رنگوں کے حوالے سے کافی لوگوں کو کانشیئس دیکھا ہے ، ہوتا صرف یہی ہے کہ کچھ برے واقعات میں کسی فرد نے کوئی ایک خاص رنگ پہن رکھا ہوتا ہے تو وہ رنگ منحوس مان لیا جاتا ہے
اب یہ تمام توہمات یا واہمے نسل در نسل آگے چل رہے ہیں اور گھر کے بڑے بوڑھے تو ان سے اختلاف بھی برداشت نہیں کرتے ، تو اس کا بہتر حل یہی ہے کہ ان سے بحث نہ کی جائے اور اگر انکی بات کو اہمیت دیتے ہوئے کسی رنگ یا مہینے سے ہم پرہیز کریں بھی تو ہمارے نیت صرف اپنے بزرگوں کی بات ماننا ہونا چاہیئے اور اس بات کا یقین ہونا چاہیئے کہ ہم پہ جو بھی آزمائش یا اچھا برا وقت آتا ہے ، سب صرف ہماری تقدیر ہوتا ہے، جو اللہ نے ہمارے لیئے لکھ دی ہے-
:replythanks:
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks