کھجل سیریز: شادی میں شرکت سے گریز کا جواز

AM

Thread Starter
Staff member
Joined
May 6, 2018
Local time
6:29 AM
Threads
9
Messages
136
Reaction score
320
Points
128
Location
Arifwala
Gold Coins
5.90
"بابا سائیں جان!! آپ نے میری شادی میں بھی شرکت نہیں کی ۔۔ آپ کیونکر کسی مرید کی شادی اٹینڈ نہیں کرتے؟"
شِیدے کن ٹُٹے نے شکوہ کیا
"بالک! اس کے پیچھے بھی ایک راز ہے"
کھجل سائیں نے رعب دار لہجے میں جواب دیا
"نہیں سائیں!! آج تو آپ کو وہ وجہ بتانی ہی پڑے گی ورنہ میں آپ سے روٹھ جاؤں گا"
شیدے نے اصرار کیا۔۔ جواباً کھجل سائیں نے آلتی پالتی مار کر یوگا کے انداز میں دونوں ہاتھ اپنے گھٹنوں پر جمائے ایک لمبی سانس بھری اور گردن اکڑاتے ہوئے کہنے لگا
"گاؤں میں ایک دوست نے مجھے اپنی شادی پر مدعو کیا۔۔ میرا دوست اپنی بیگم کے ساتھ مسند پر براجمان تھا کہ گاؤں کے رسم و رواج کے مطابق پگڑیاں بدلنے کی رسم شروع ہوگئی۔۔۔ میرے دوست کا باپ کھڑا ہوا اور بلند آواز میں گویا ہوا
"میں ہوں لڑکے کا باپ۔۔۔ کہاں ہے لڑکی کا باپ؟؟سامنے آئے" تو قریب ہی بیٹھا ایک بزرگ اٹھ کھڑا ہوا جو کہ یقیناً لڑکی کا باپ تھا۔۔ اس کے بعد میرے دوست کے باپ نے اور دلہن کے باپ نے اپنی اپنی پگڑی اتاری اور ایک دوسرے کے سر پر رکھ دی۔۔
میرے دوست کا چچا کھڑا ہوا اور کہنے لگا "میں ہوں دولہے کا چچا، دلہن کا چاچا کہاں ہے؟ سامنے آئے" اس طرح دوست کے چچا نے دلہن کے چچا کے ساتھ پگڑی تبدیل کی۔۔ اس کے بعد دوست کا ماموں اٹھ کھڑا ہوا اس نے دلہن کے ماموں کے ساتھ پگڑی تبدیل کی۔۔ باری باری میرے دوست کی فیملی کے بڑے دلہن کے بڑوں کے ساتھ پگڑیاں تبدیل کرتے رہے۔۔ آخر پر میں بچ گیا۔۔ سب کی نظریں مجھ پر مرکوز تھیں۔۔ اب چونکہ دولہا میرا یار تھا۔۔ ہم ایک دوسرے کے بہترین دوست تھے اس لیے ضروری تھا کہ مجھے جو اتنی عزت سے نوازا گیا ہے میں بھی رسم میں حصہ لوں۔۔ چنانچہ میں اٹھ کر کھڑا ہوا اور آواز بلند کی
"میں ہوں دولہے کا یار، کہاں ہے دلہن کا یار؟؟ سامنے آئے"
کھجل سائیں اتنی بات بتا کر خاموش ہوگیا
"باباجی پھر کیا ہوا؟"
شیدے نے متجسس ہوکر پوچھا۔۔
"ہونا کیا تھا بچہ!! بس اس کے بعد چراغوں میں روشنی نا رہی"
:/
:/ وہ دن جائے آج کا آئے۔۔ میں کبھی کسی کی شادی میں شریک نہیں ہوا"
شِیدا اٹھ کر باباجی کے کاندھے دبانے میں مشغول ہوگیا۔۔ یہ اس کا اظہارِ افسوس کا ایک انداز تھا
از- اے ایم
 

yearofthemask

★★★★★★
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
P A K I S T A N
Joined
May 5, 2018
Local time
9:29 AM
Threads
180
Messages
4,897
Reaction score
6,478
Points
1,181
Location
آئی ٹی درسگاہ
Gold Coins
1,385.39
Username Change
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
ھاھاھا کہانی بہت اچھی لکھی ہے،کھجل سائیں کی زبان بہک گئی۔
:p:eek:
 
Joined
May 9, 2018
Local time
6:29 AM
Threads
28
Messages
204
Reaction score
195
Points
39
Location
Pakistan
Gold Coins
8.00
"بابا سائیں جان!! آپ نے میری شادی میں بھی شرکت نہیں کی ۔۔ آپ کیونکر کسی مرید کی شادی اٹینڈ نہیں کرتے؟"
شِیدے کن ٹُٹے نے شکوہ کیا
"بالک! اس کے پیچھے بھی ایک راز ہے"
کھجل سائیں نے رعب دار لہجے میں جواب دیا
"نہیں سائیں!! آج تو آپ کو وہ وجہ بتانی ہی پڑے گی ورنہ میں آپ سے روٹھ جاؤں گا"
شیدے نے اصرار کیا۔۔ جواباً کھجل سائیں نے آلتی پالتی مار کر یوگا کے انداز میں دونوں ہاتھ اپنے گھٹنوں پر جمائے ایک لمبی سانس بھری اور گردن اکڑاتے ہوئے کہنے لگا
"گاؤں میں ایک دوست نے مجھے اپنی شادی پر مدعو کیا۔۔ میرا دوست اپنی بیگم کے ساتھ مسند پر براجمان تھا کہ گاؤں کے رسم و رواج کے مطابق پگڑیاں بدلنے کی رسم شروع ہوگئی۔۔۔ میرے دوست کا باپ کھڑا ہوا اور بلند آواز میں گویا ہوا
"میں ہوں لڑکے کا باپ۔۔۔ کہاں ہے لڑکی کا باپ؟؟سامنے آئے" تو قریب ہی بیٹھا ایک بزرگ اٹھ کھڑا ہوا جو کہ یقیناً لڑکی کا باپ تھا۔۔ اس کے بعد میرے دوست کے باپ نے اور دلہن کے باپ نے اپنی اپنی پگڑی اتاری اور ایک دوسرے کے سر پر رکھ دی۔۔
میرے دوست کا چچا کھڑا ہوا اور کہنے لگا "میں ہوں دولہے کا چچا، دلہن کا چاچا کہاں ہے؟ سامنے آئے" اس طرح دوست کے چچا نے دلہن کے چچا کے ساتھ پگڑی تبدیل کی۔۔ اس کے بعد دوست کا ماموں اٹھ کھڑا ہوا اس نے دلہن کے ماموں کے ساتھ پگڑی تبدیل کی۔۔ باری باری میرے دوست کی فیملی کے بڑے دلہن کے بڑوں کے ساتھ پگڑیاں تبدیل کرتے رہے۔۔ آخر پر میں بچ گیا۔۔ سب کی نظریں مجھ پر مرکوز تھیں۔۔ اب چونکہ دولہا میرا یار تھا۔۔ ہم ایک دوسرے کے بہترین دوست تھے اس لیے ضروری تھا کہ مجھے جو اتنی عزت سے نوازا گیا ہے میں بھی رسم میں حصہ لوں۔۔ چنانچہ میں اٹھ کر کھڑا ہوا اور آواز بلند کی
"میں ہوں دولہے کا یار، کہاں ہے دلہن کا یار؟؟ سامنے آئے"
کھجل سائیں اتنی بات بتا کر خاموش ہوگیا
"باباجی پھر کیا ہوا؟"
شیدے نے متجسس ہوکر پوچھا۔۔
"ہونا کیا تھا بچہ!! بس اس کے بعد چراغوں میں روشنی نا رہی"
:/
:/ وہ دن جائے آج کا آئے۔۔ میں کبھی کسی کی شادی میں شریک نہیں ہوا"
شِیدا اٹھ کر باباجی کے کاندھے دبانے میں مشغول ہوگیا۔۔ یہ اس کا اظہارِ افسوس کا ایک انداز تھا
از- اے ایم
:LOL:
ھاھاھا کہانی بہت اچھی لکھی ہے،کھجل سائیں کی زبان بہک گئی۔
:p:eek:
جان بھی بچ گئی ورنہ باباکھجل سائیں سے بابا کھجل سائیں بھولے بسرے ہو گزرے بن گئے ہوتے۔
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
2:29 AM
Threads
1,354
Messages
7,659
Reaction score
6,964
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
114.88
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
کھجل سیریز: شادی میں شرکت سے گریز کا جواز
Please, Log in or Register to view URLs content!

بہت بہت شکریہ
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks