پردہ کا فائدہ اور بے پردگی کا نقصان

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
10:12 PM
Threads
267
Messages
1,147
Reaction score
1,887
Points
703
Gold Coins
2,479.83
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners

Abu Dujana

⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Expert
Popular
Helping Hands
Joined
Apr 25, 2018
Local time
10:12 PM
Threads
81
Messages
963
Reaction score
1,360
Points
452
Location
Karachi, Pakistan
Gold Coins
513.90
جزاک اللہ۔۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو دین کی صحیح سمجھ عطا فرمائے آمین
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
سلام نے نگاہ اور زنا کے فتنے سے بچنے کے لئے پردے کی پابندی لگائی ہے۔ عورت عفت و عصمت کی پیکر ہے۔ یہ حیا کی چادر ہے لیکن افسوس کہ آج کل ہماری ماں بہنوں میں پردہ اُٹھتا چلا جا رہا ہے اور ایسا لگتا ہے کہ گویا بے پردگی کو کوئی گناہ تسلیم کرنے کے لئے بھی تیار نہیں حالانکہ بے پردگی حرام ہے قرآن مجید میں پردے کی خاص تاکید کی گئی ہے چنانچہ ارشاد ہوتا ہے۔​
اور اپنے گھروں میں ٹھہری رہو اور بے پردہ نہ رہو جیسے اگلی جاہلیت کی بے پردگی۔‘‘ (الاحزاب پ ۲۲​

اسلام نے حجاب کی شکل میں عورتوں کو اپنا علیحدہ تشخص عطا کیا ٗ انہیں اپنے مستقل وجود کا احسا دِلایا ٗ مردوں کی ہوس کا اسیر ہونے سے بچایا ٗ بلکہ وہ ہتھیار عطا فرمایا کہ جوان کے تحفظ کا ضامن ہے​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited

پردہ مسلمان عورت کا فریضہ ہے۔ جب عورت پردہ نکلنی ہے اس کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہے کہ لوگوں کی توجہ عورت کے پردہ پر مذکورہ ہوتی ہے۔ پردہ عورت کے لئے دیوار ہے لوگ آگے عورت کے جسم کو نہیں دیکھ سکے۔​

عورت عربی زبان کا لفظ ہے۔ جس کے معنی سر ڈھانپنا یا پردہ ہے ٗ جب عورت کا معنی ہی پردہ ہے تو پھر ہماری خواتین کو پردے سے آخر اتنی دُشمنی کیوں ہے؟ جو پردے کے نام سے کتراتی ہیں اور پردہ کرنا اپنی توہین سمجھنے لگی ہیں اور پھر بھی عورت کہلاتی ہیں جب کبھی عورت کی عظمت کی بات ہو تو حوالہ یہ دیا جاتا ہے کہ اسلام نے عورت کو بہت بلند مقام عطا کیا ہے ماں کے قدموں تلے جنت ہے غرض ہر کردار میں عورت کو عزت بخشی ہے لیکن اسلام نے یہ عزت و مرتبہ ان عورتوں کو بخشا ہے جو عورتیں پردے کے تقاضے بھی پوری کرتی ہیں۔​

عورت جس کے سر پر دین فطرت نے غیرت و آبروکا تاج رکھا تھا جس کے گلے میں عفت و عصمت کے ہار ڈالے تھے آج وہ تجارتی اداروں کے لئے ایک شوپیس اور مرد کی تھکن دُور کرنے کے لئے ایک تفریح کا سامان بن کر رہ گئی۔جب سے معاشرے میں بے پردگی کا رواج بڑھا ہے اسی وقت سے اغواء زنا اور دوسرے جرائم کی شرح کہیں سے کہیں پہنچ گئی ہے۔ ان لعنتوں کے سدباب کا اگر کوئی راستہ تو صرف یہ ہے کہ ہم پردے کے سلسلہ میں اپنا رویہ بدلیں۔​

آج پوری دُنیا میں خصوصاً اسلامی ممالک میں بے پردگی اور عریانیت کا سیلاب برپا ہے اور بے پردگی میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے عورت کو بے پردہ کرکے بطور ہتھیار استعمال کرنا یہود ونصاریٰ کا خاص مشن ہے ایک یہودی مصنف کہتا ہے کہ​

معاشرے کے بے دین بنانے میں عورت زیادہ موثر کردار ادا کر سکتی ھے​

شیطانی نگاہوں سے بچنے کے لئے پردہ میں رہنا ضروری ہے اس سے نہ صرف انسان بری نگاہوں سے بچ سکتا بلکہ اللہ تعالیٰ کی خوشنودی بھی حاصل ہوتی ہے۔​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
اب بھی اگر ہماری مائیں بہنیں پردہ کرنے کا تہیہ کر لیں تو کبھی بھی عصمت دری کی نوبت نہ آئے ہمارے رسائل ٗ جرائد پر بے پردہ خواتین کی تصاویر بڑے اسٹائلش انداز میں پیش کرکے عورت کے دل سے پردے کی اہمیت کو بالکل ختم کِیا جاتا ہے۔ہماری خواتین اگر ماں ٗ بیٹی ٗ بہن اور بہو غرض کسی بھی رُوپ میں معاشرے میں مقام و عزت حاصل کرنا چاہتی ہیں تو یہ صرف اسی صورت میں ممکن ہے کہ وہ پردے کو کسی حالت میں نہ چھوڑیں اس کے برعکس اگر خواتین پردے کو اپنی توہین سمجھتی رہیں تو پھر اسی طرح ذلیل و رسواہوتی رہیں گی جس طرح آج ہو رہی ہیں۔مُسلمان عورت پردہ میں رہ کر اسلامی تعلیمات پر عمل پیرا ہو کرتعلیم و تربیت اور تبلیغ کا فریضہ انجام دے کر آزادی نسواں کا نعرہ لگانے اور مغربی تہذیب کو گلے لگانے والی خواتین کو شکست فاش دے سکتی ہیں اور اسلام کی فتح مبین اور اس کی سربلندی کا باعث بن سکتی ہیں۔ (انشاء اللہ تعالیٰ) دُعاہے اللہ تعالیٰ ہماری عورتوں کو باپردہ رہ کر یہودو نصاریٰ کے عزائم کو خاک میں ملانے کی توفیق دے​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
عورتوں کی عصمت و عفت کی حفاظت اور معاشرے کی اخلاقی پاکیزگی کے لئے سب سے اہم بات یہ ہے کہ عورتوں کا مردوں سے کم سے کم اختلاط ہو جس کی سب سے اچھی صورت یہ ہے کہ خود عورتیں بلا ضرورت گھروں سے نہ نکلیں کہ ان کا بکثرت گھروں سے نکلنا نامحرموں سے ٹکرائو اور شدید فتنے کا سبب بنتا ہے جیسا کہ اسلام سے پہلے کی جاہلیت قدیمہ اور موجودہ جاہلیت جدیدہ سے یہ بات نمایاں طور پر واضح ہے۔ یہی وجہ ہے کہ قرآن کریم نے مسلمان عورتوں کو اپنے گھروں میں ٹکے رہنے کا خاص طور سے حکم دِیا ہے​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
صرف یہی نہیں کہ مفسرین عظام نے امت کو یہ بتا دیا ہو کہ اس آیت کے تحت مسلمان عورت پر پردہ کرنا لازم ہوتا ہے اور پردے میں چہرے کا پردہ بھی شامل ہے بلکہ ان بزرگوں ہستیوں نے (اللہ ان کی قبریں نور سے بھرے) باقاعدہ چادر اوڑھنے کا طریقہ بھی بتایا ہے۔ قاضی شوکانی لکھتے ہیں :​
علامہ ابن جریر ٗ ابن ابی حاتم اور ابن مردویہ نے حضرت ابن عباس ؓ سے اس آیت کی تفسیر میں نقل کیا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے اس آیت میں مسلمان عورتوں کو حکم دیا ہے کہ جب وہ کسی ضرورت کے تحت گھر سے نکلیں تو اپنی چادروں سے اپنے سروں کو ڈھانپتی ہوئی اپنے چہروں کو چھپا کر نکلیں اور وہ صرف ایک آنکھ کھلی رکھ سکتی ہیں(فتح القدیر۷؍۳۰۷​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
حضرت محمد بن سیرین جو کہ مشہور تابعی ہیں چادر اوڑھنے کا یہ طریقہ نقل کرتے ہیں ۔ وہ کہتے ہیں کہ​
میں نے حضرت عبیدہ بن سفیان بن حارث حضرمی سے اس کا طریقہ پوچھا تو اُنہوں نے اپنی شال اُٹھائی اور اسے باقاعدہ اوڑھ کر سمجھایا پہلے اُنہوں نے اس سے اپنے سر اور پیشانی کو اس طرح ڈھانکا کہ بھنویں تک چھپ گئی پھر اسی چادر سے اپنے چہرے کے بقیہ حصے کو اس طرح چھپایا کہ صرف داہنی آنکھ کھلی رہ گئی۔ (روح المعانی بحوالہ مذکور احکام القرآن جصاص ۔ ج ۵ ص ۲۴۴ ۔ تفسیر قرطبی ج ۱۴ ص ۲۴۳​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
امام رازی لکھتے ہیں:​
زمانہ جاہلیت میں اشراف کی عورتیں اور لونڈیاں سب کھلی پھرتی تھیں اور بدکار لوگ ان کے تعاقب میں رہا کرتے تھے۔ اس آیت میں اللہ تعالیٰ نے شریف عورتوں کو حکم دیا کہ وہ اپنے اُوپر چادر ڈال لیا کریں تاکہ اس طرح وہ صاف پہچان لی جائیں۔ پہچانے جانے کے دو طریقے ہو سکتے ہیں ایک تو یہ کہ لباس سے پہچان لیا جائے گا کہ وہ شریف عورتیں ہیں اور ان کا پیچھا نہ کِیا جائے گا دوسرے یہ کہ اس سے معلوم ہو جائے گا کہ وہ بد کار نہیں ہیں کیونکہ جو عورت چہرہ چھپائے گی تو کوئی شخص اس سے یہ توقع نہیں کرے گا کہ ایسی شریف عورت کشف ستر پر آمادہ ہو جائے گی۔ چنانچہ اس لباس سے یہ ظاہر ہو جائے گا کہ وہ ایک پردہ دار عورت ہے اور اس سے بدکاری کی توقع نہیں کی جا سکے گی۔ (تفسیر ابن کثیر ۔ ج ۲۵ ص ۲۳۰​

علامہ قرطبی لکھتے ہیں:​

چونکہ زمانہ جاہلیت میں عورتیں گھٹیا اطوار کی عادی تھیں اور باندیوں کی طرح کھلے چہرے پھرا کرتی تھیں اور یہ چیز مردوں کی نظروں کو اپنی طرف کھینچتی اور ان کی ذہنی آوارگی کا سبب بنا کرتی تھی تو اللہ تعالیٰ نے اپنے رسول کو اس آیت میں حکم فرمایا کہ وہ مسلمان عورتوں سے کہہ دین کہ جب وہ اپنی ضروریات کے لئے گھروں سے باہر نکلا کریں تو چہروں پر گھونگٹ ڈال لیا کریں۔ (تفسیر قرطبی۔ ج ۱۴ ص ۲۴۳​

علامہ ابن جوزی ؒ لکھتے ہیں:​

امام ابن تیمیہ ؒ کے بقول اس آیت کا مطلب یہ ہے کہ مسلمان عورتیں بڑی بڑی چادریں اوڑھا کریں۔ دوسرے علماء کا یہ کہنا ہے کہ عورتیں چادریں اس طرح اوڑھیں کہ ان کے سر اور چہرے چھپ جائیں تاکہ دیکھنے والے کو معلوم ہو جائے کہ وہ آزاد اور شریف عورتیں ہیں۔(زادالمسیر ج ۶ صفحہ ۴۲۲۔ بحوالہ: حجاب پردہ کے شرعی احکام)​

حضرت ابن عباس ؓ کے قول میں مذکور ایک آنکھ کھلی رہنے کی رخصت بھی راستہ دیکھنے کی ضرورت کے پیش نظر دی گئی ہے لہٰذا جہاں راستہ دیکھنے کی ضرورت نہ ہوگی وہاں ایک آنکھ سے بھی پردہ ہٹانے کی کوئی وجہ نہیں۔​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
بوڑھی کے لئے بھی پردہ کا حکم:​
ارشاد باری تعالیٰ ہے:​

والقواعد من النساء التی لا یر جون نکاحا فلیس علیھن جناح ان یضعن ثیابھن غیر متبر جت بزینۃ و ان یستعففن خیر لھن واللّٰہ سمیع علیم (النور۲۴/۶۰)​

اور بڑی عمر کی عورتیں جن کو نکاح کی توقع نہیں رہی وہ اگر چادر اُتار دیں تو ان پر کچھ گناہ نہیں بشرطیکہ اپنی زینت کا مظاہرہ نہ کرتی پھریں اور اگر اس سے بھی بچیں تو یہ ان کے حق میں بہتر ہے اور اللہ تعالیٰ سننے والا جاننے والا ہے۔​

اس آیت کریمہ سے پردہ کے واجب ہونے پر وجہ استدلال یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ نے ان بوڑھی عورتوں سے گناہ کی نفی کی ہے جو سن رسیدہ ہونے کے سبب نکاح کی اُمید نہیں رکھتیں اس لئے کہ بوڑھی ہونے کی وجہ سے مردوں کو ان کے ساتھ نکاح میں کوئی رغبت نہیں ہوتی لیکن اس عمر میں بھی چادر اُتار رکھنے پر گناہ نہ ہونا اس شرط کے ساتھ مشروط ہے کہ اس سے ان کا مقصد زیب و زینت کی نمائش نہ ہو چادر اُتار دینے کا مطلب یہ ہرگز نہیں ہے کہ وہ کپڑے اُتار کر بالکل برہنہ ہو جائیں بلکہ اس سے صرف وہ کپڑے مراد ہیں عام لباس کے اُوپر سے اس لئے اوڑھے جاتے ہیں کہ جسم کے وہ حصے جو عام لباس سے عموماً باہر رہتے ہیں جیسے چہرہ اور ہاتھ چھپ جائیں۔ لہٰذا ان بوڑھی عورتوں کو جنہیں کپڑے اُتارنے کی رخصت دی گئی ہے اس سے مراد مذکورہ اضافی کپڑے (یعنی چادریں برقعے وغیرہ) ہیں جو پورے جسم کو ڈھانپتے ہیں۔ اس حکم کی عمر رسیدہ خواتین کے ساتھ تخصیصی دلیل یہ ہے کہ جوان اور نکاح کی عمر والی عورتوں کا حکم ان سے مختلف ہے کیونکہ سب عورتوں کے لئے اضافی کپڑے اُتار دینے اور صرف عام لباس پہننے کی اجازت ہوتی تو سن رسیدہ ونکاح کی عمر سے گزری ہوئی عورتوں کو بالخصوص ذکر کرنے کا کوئی مقصد نہیں رہ جاتا۔​

مذکورہ آیت کریمہ کے الفاظ (غیر متبر جت بزینۃ) ’’بشرطیکہ یہ بوڑھی عورتیں اپنی زینت کا مظاہرہ نہ کرتی پھریں۔‘‘ اس بات کی ایک اور دلیل یہ ہے کہ نکاح کے قابل جوان عورتوں پر پردہ فرض ہے۔چونکہ عام طور پر جب وہ اپنا چہرہ کھلا رکھتی ہیں تو اس کا مقصد زینت کی نمائش اور حسن و جمال کا نمایاں مظاہرہ کرنا ہوتا ہے۔ ان کی خواہش یہ ہوتی ہے کہ مردان کی طرف دیکھیں اور ان کے حسن و جمال کی مدح و توصیف کریں اس قماش کی عورتوں میں نیک نیت شاذونادر ہی ہوتی ہیں اور شاذو نادر صورتوں کو عام قوانین کی بنیاد نہیں بنایا جا سکتا۔​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
پردے کی آڑ سے گفتگو کرنی چاہئے:​
سورۃ احزاب آیت نمبر ۵۳ میں حکم دیا گیا ہے کہ:​

واذا سالتموھن متاعاً فسئلوھن من وراء حجاب ذلکم اطھر لقلوبکم و قلوبھن​

اے مسلمانو) جب کبھی تم کوئی چیزان (ازواج مطہرات) سے مانگو تو پردے کے پیچھے سے مانگو یہ تمہارے اور ان کے دِلوں کی طہارت کے لئے عمدہ طریقہ ہے​

اللہ اللہ! ایک طرف تو مسلمانوں کی مائیں ازواج مطہرات ہیں کہ جن کی عفت و عصمت اور پاکدامنی اور تقویٰ کے سامنے سارے جہاں کی عورتوں کی عفت وعصمت ہیچ ہے اور دوسری جانب صحابہ کرام رضوان اللہ تعالیٰ علیہم اجمعین ہیں کہ جن کے مصفیٰ ومطہر قلوب ہونے کا کوئی ثانی ہی نہیں اور نتیجتاً جنتی ہونے کا ان کی زندگی ہی میں اللہ تعالیٰ نے قرآنی سرٹیفیکیٹ جاری کر دیا تھا۔لیکن اس کے باوجود حکم دیا جا رہا ہے کہ جب بھی ان سے کوئی چیز مانگو تو پردے کی آڑ سے مانگو تا کہ دونوں جانب قلوب میں طہارت و پاکیزگی رہے خاکم بدہن نہ تو ازواج مطہرات کی نیتوں میں فتور تھا اور نہ ہی نعوذ بااللہ من ذالک صحابہ کرام ؓ کے قلوب میں کوئی کدورت تھی بلکہ یہ تو صرف امت کی عورتوں اور مردوں کو تعلیم دی جا رہی تھی کہ پردہ کیوں اور کس طرح کرنا چاہئے اور طہارت قلوب واذہان کے لئے کیا بندوبست ہونا چاہئے۔​

اس آیت سے ان خواتین کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں جو دانستہ یا نادانستہ یہ کہتی ہیں کہ ہمارا دل صاف ہے اور ہماری نیت پاک ہے لہٰذا ہم کو برقعہ کی کیا ضرورت ہے۔ہماری بھی یہی تمنا ہے اور دُعا بھی کہ ہماری بہنیں متقی وپرہیزگار رہیں لیکن ان کا طرز فکر غلط ہے اور یہ محض ابلیسی وسوسہ ہے ان معصوم بہنوں کو قطعاً علم نہیں کہ جب وہ بازاروں میں گھومتی پھرتی ہیں تو کتنے نوجوانوں کے دلوں کو گرماتے ہوئے یا برماتے ہوئے گزر جاتی ہیں۔​

اس کا مشاہدہ روزانہ بسوں میں سفر کرنے والے نوجوانوں کی گفتگو سے لگایا جا سکتا ہے اور اسی کی طرف قرآن نے بھی سورۃ احزاب میں اشارہ کیا ہے جبکہ سورۃ نور کی آیت نمبر۳۱ میں یہ حکم دیا جا چکا ہے کہ مردوں کے سامنے بے پردہ نہ جائو ٗ نیز یہ کہ اپنی زینت و آرائش کو مردوں سے پوشیدہ رکھو تو پھر کسی کو یہ کہنے کا کیا حق ہے کہ ہماری نیت پاک ہے کیا یہ خواتین ازواج مطہرات سے زیادہ متقی و پرہیزگار ہیں؟​

مندرجہ بالا آیت سے یہ مغالطہ ہو رہا تھا کہ ازواج مطہرات کے باپ ٗ بیٹوں اور دیگر رشتہ داروں اقرباء کو بھی پردے کی آڑ سے گفتگو کرنی چاہئے۔ صحابہ کرامؓ بھی اس سلسلے میں وضاحت کے منتظر تھے۔افلح بن ابی قعیس نے جب ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ ؓ سے کہا کہ تم مجھ سے پردہ نہیں کر سکتیں کیونکہ تم میرے بھائی کی بیٹی ہو تو عائشہ صدیقہ ؓ نے نہ ماناحضور ﷺکے سامنے جب یہ معاملہ پیش ہوا تو آپ ؒ نے فرمایا وہ تمہارا (رضاعی) چچا ہے وہ یہاں آسکتا ہے چنانچہ اسی کی وضاحت کے لئے احزاب کی آیت نمبر ۵۵ نازل ہوئی جس نے مسئلہ حجاب کو صاف اور واضح کر دیا ارشاد ہوا:​

لا جناح علیھن … واتقین اللّٰہ​

(پردہ نہ کرنے میں ) کوئی گناہ نہیں (پیغمبرکی بیبیوں کو) نہ اپنے باپوں اور نہ اپنے بیٹوں اور نہ بھائیوں اور نہ اپنے بھتیجوں اور نہ اپنے بھائیوں اور نہ اپنی عورتوں سے اور نہ اپنی لونڈیوں سے اور خدا سے ڈرتے رہو​

قبل ازیں بھی واضح کر دیا گیا ہے اور دوبارہ عرض ہے کہ رسول اللہ ﷺ اور ازواج النبی ﷺ کو جو حکم دیا جاتا ہے امت کے مردوں اور عورتوں کے لئے بھی وہی حکم واجب التعمیل ہوتا ہے جیسے نماز ٗ روزہ ٗ زکوٰۃ ٗ حج وغیرہ (تفصیل کے لئے ملا خطہ ہو تفسیر ابن کثیر اور معارف القرآن وغیرہ​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
:​
سورۃ نور کی آیت نمبر۲۷ میں ہدایت فرمائی:​

یایھا الذین امنو لا تدخلو بیوتاً غیر بیوتکم حتّٰی تستانسوا۔​

اے مسلمانو! اپنے گھروں کے سوا (دوسرے ) گھروں میں بغیر اجازت لئے داخل نہ ہو۔​

اور مشکوٰۃ میں دو روایات ہیں جن کا مفہوم یہ ہے کہ اپنے گھروں میں بھی داخلے سے پہلے اجازت لے لیا کرو مبادا ایسا نہ ہو کہ تمہاری ماں ( یا کوئی اور عورت) گھر میں مردنہ ہونے کی وجہ سے بے تکلف بیٹھی ہو اور تمہارے بلا اجازت داخلے سے اس کی بے حرمتی ہو جائے۔اس حدیث کے تحت ہمارا اخلاقی فرض ہے کہ خود اپنے گھروں میں داخل ہوں تو داخلے سے پہلے آواز دے لیں یا ایسی حرکات کریں کہ جس سے گھر کی عورت کو سنبھل کر باوقار طور پر بیٹھنے کا موقعہ مل جائے۔​

حضور ﷺ نے مردوں کو حکم دیا کہ غیر محرم عورتوں کے پاس تنہائی میں نہ جایا کرو تو ایک انصاری صحابی نے عرض کیا ٗ دیور اورجیٹھ کے بارے میں کیا حکم ہے (یعنی کہ وہ عام طور پر گھروں میں خلوت و جلوت ہر دو موقعوں پر گھر میں آتے جاتے ہیں؟) تو فرمایا کہ:’’یہ تو موت ہے (یعنی زیادہ خطر ناک ہے)۔‘‘ (مسلم )​

مسلم اور اسی سورۃ کی آیت نمبر ۵۹ میں حکم دیا کہ:​

’’جب بچے سن شعور کو پہنچ جائیں تو انہیں بھی مردوں کی طرح گھروں میں اجازت لے کر داخل ہونا چاہئے۔‘‘​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
ام مکتوم ؓ نامی نابینا صابی ؓ سے پردہ:​
یہ واقعہ نزول حجاب کے بعد کا ہے اس حدیث سے عورتوں کے متعلق معلوم ہوتا ہے کہ وہ خود بھی کسی مرد کو نہ دیکھیں ’’یحفظن فروجھن‘‘ کے متعلق سعید بن جبیر کہتے ہیں کہ اس میں خواہش سے بچنے کا حکم ہے قتادہؒ اور سفیان ؒ کہتے ہیں ان تمام چیزوں سے عورتوں کی حفاظت کا حکم ہے جو ان کے لئے حلال نہیں ہیں۔ (ابن کثیر​

دین و دنیا میں عورتوں کی عزت و محافظت کس چیز میں ہے؟​

زید ابن طلحہ ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:​

’’ہر دین کی ایک خاص عادت و اخلاق ہوتے ہیں دین اسلام کی خاص عادت و اخلاق حیاء ہے۔‘‘ (بیہقی و تفسیر مظہری​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
عورت جب بغیر پردہ کے باہر نکلتی ہے تو شیطانی عملہ حرکت میں آتا ہے:​
ترمذی نے حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ نے آنحضرت ﷺ کا ارشاد نقل کیا ہے کہ آپ نے فرمایا:​

المراۃ عورۃ فاذا خرجت استشرفھا الشیطان (مشکوۃ ص ۲۶۹​

عورت پردہ میں رہنے کی چیز ہے جب کوئی عورت (اپنے پردہ سے باہر ) نکلتی ہے تو شیطان اس کو مردوں کی نظروں میں اچھا کرکے دکھاتا ہے۔​

عورت ستر ہے اور ستر چھپانے والی چیز کو کہا جاتا ہے عورت جب تک چھپی ہوئی ہے تو عورت ہے۔ اس میں حیاء ہے ٗ پاکدامنی ہے اور اپنے مرد کے ساتھ وفاداری اور نباہ کا جذبہ ہے ٗ لیکن یہی عورت جب کالج یا دفتر کے ماحول میں قدم رکھتی ہے اور مختلف نظروں کا نشانہ بنتی ہے تو پھر اس کے اندر سے خاوند کی محبت اور وفاداری کا جذبہ نکل کر ہر مرد کے لئے پرکشش بننے کا جذبہ بیدار ہوتا ہے۔​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
عورت کی فطرت میں دو چیزیں شامل ہیں:​
حضرت انس ؓ کا بیان ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا اللہ تعالیٰ کاارشاد ہے کہ ہرعورت کی فطرت میں دو چیزیں ضرور شامل ہیں:​

(۱​

ضعف​

(۲)​

پوشیدہ (یعنی پردہ)​

تمہارے لئے ان کے ضعف کا علاج خاموشی ہے اور چھپانے کی تدبیر چارد دیواری ہے (جہاں تک ہو سکے گھر کے اندر رکھو)۔ (الحدیث ترمذی شریف جلد نمبر۲​

اور حقیقت یہی ہے کہ جو چیز جتنی قیمتی ہوتی ہے اس کو اسی قدر زیادہ چھپایا جاتا ہے اگر یہ بات نہ ہوتی تو پھر کیا وجہ ہے کہ ہیرے جواہرات کا بیوپار کرنے والے ایک ایک ہیرے کو چھپا کر رکھتے ہیں سونے چاندی کے زیورات کا بیمہ کرالیا جاتا ہے اس لئے کہ چوری نہ ہو جائے کوئی اُٹھا کر نہ لے جائے کیا بیمہ والے احمق ہیں؟​

اب اگر کوئی اپنی کم عقلی کی وجہ سے یہ کہے کہ چھپا کر رکھنے سے اشتیاق اور بڑھ جاتا ہے اور چوری کاخطرہ زیادہ رہتا ہے مثلاً جس صندوق کو نہ کھولنے کی تاکید نوکر کوکی جاتی ہے اسی صندوق پر اس کی نظر زیادہ ہوتی ہے۔ برقع پوش عورتوں کا جس قدرتعاقب کیا جاتا ہے بے پردہ عورتوں کا اتنا نہیں کیا جاتا۔تو یہ سب باتیں اس کی کم عقلی اور کم علمی کا ثبوت ہونگیں یہ دلائل اپنی جگہ بے وزن وبے جان ہیں اگر یہ دلائل مان لئے جائیں تو پھر مکان و دکان کے دروازے بھی بے کار بن جاتے ہیں اور انسان کے لئے کپڑے پہننا بھی بے وقوفی کی نشانی بن جائے گا کیونکہ کپڑے بھی تجسس پیدا کرتے ہیں۔​

غرض عورت قدرت کی عظیم شے ہے اور دُنیا میں بہت ہی قیمتی چیز ہے جس کے لئے تخت وتاج کو بھی حقیر سمجھا گیا ہے اس لئے اس کی حفاظت اور نگرانی سب سے زیادہ ضروری ہے مردوں کی سلامتی اسی میں ہے۔​
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
6:12 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
111.76
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
ایک انگلستانی خاتون کی حسرت:

انگلستان کی ایک شریف عورت نے بصد حسرت وندامت اپنے ملک کی عورتوں کے متعلق ایک مقالہ لکھا ہے جس کا ترجمہ مصر کے ماہنامہ ’’المنار‘‘ میں شائع ہوا ہے۔جس میں یہ تھا کہ:

’’انگلستان کی عورتیں اپنی عفت اور عصمت کھو چکی ہیں اور ان میں بہت کم ایسی ملیں گی جنہوں نے اپنے دامن عصمت کو حرام کاری کے دھبے سے آلودہ نہ کیا ہو۔ ان میں شرم وحیا ء نام کو بھی نہیں اور ایسی آزادانہ زندگی بسر کرتی ہیں کہ اس ناجائز آزادی نے ان کو اس قابل نہیں رہنے دیا کہ ان کو انسانوں کے زمرے میں شامل کیا جائے۔ ہمیں سر زمین مشرق کی مسلمان خواتین پر رشک آتا ہے جو نہایت دیانت اور تقویٰ کے ساتھ اپنے شوہروں کے زیر فرمان رہتی ہیں اور ان کی عصمت کا لباس گناہ کے داغ سے ناپاک نہیں ہوتا۔ وہ جس قدر فخر کریں ٗ بجا ہے اور اب وہ وقت آرہا ہے کہ اسلامی احکام شریعت کی ترویج سے انگلستان کی عورتوں کی عفت کو محفوظ رکھا جائے۔‘‘

پردہ اور وان ہیمر کی ریسرچ:

وان ہیمر کہتا ہے کہ:

پردہ کو اسلام نے ضروری اور عورتوں کو اجنبیوں سے میل جول رکھنے کو جو حرام قرار دیا ہے اس کا مفہوم ہرگز یہ نہیں کہ عورتوں سے اعتماد کے جذبے کو فنا کر دیا جائے بلکہ یہ ایک وسیلہ ہے ان کی ناموس کی حفاظت و احترام کا ٗ اور ذریعہ ہے ان کی رسوائی کی روک تھام کا۔ درحقیقت اسلام کی نظر میں عورت کا جو درجہ ومقام ہے وہ یقینا قابل رشک ہے۔

مشرقی عورتوں نے مغرب کی تقلید ہی کو زندگی کی معراج سمجھ رکھا ہے ۔ لیکن شاید ان کو یہ معلوم نہیں کہ خودمغرب بھی آج کل اپنی تہذیب سے نالاں ہے۔ چنانچہ لندن کے مشہور ماہنامے ’’لیڈیز میگزین‘‘ میں حال میں ایک انگریز خاتون کا مضمون شائع ہوا ہے۔ اس مضمون میں یہ خاتون لکھتی ہیں:

’’ہم بظاہر کتنے ہی خوش اور بشاش کیوں نہ دکھائی دیں لیکن یہ امر واقعہ ہے کہ ہماری خانگی زندگیاں نہایت خراب ہیں۔ چنانچہ انگلستان میں سو میں سے نوے شادی شدہ جوڑوں میں کشیدگی اور خانہ جنگی پائی جاتی ہے۔ اس کشیدگی اور خانہ جنگی کی ذمہ داری سے اگرچہ مردوں کو بھی بے تعلق قرار نہیں دِیا جا سکتا ٗ مگر بڑی وجہ یہ ہے کہ انگلستان کی عورتیں اندھی آزادی کے معاملے میں ضرورت سے زیادہ آگے بڑھ چکی ہیں اور ان کی غیر ذمہ دارانہ روش نے ہمارے گھروں کے سکون کو برباد کر دیا ہے۔ ہماری معاشرتی اور خانگی زندگی اب اس وقت تک درُست نہیں ہو سکتی جب تک کہ عورتوں کے دائرہ حقوق کو اور آزادی کو محدود نہیں کیا جائے گا۔‘‘

یہ کسی مشرقی عورت کے خیالات نہیں ہیں بلکہ ایک ایسی مغربی خاتون کے محسوسات ہیں جو انگلستان کی فضا میں پلی ہے اور اسی فضا میں اس نے اپنی ساری زندگی گذاری ہے۔ اس مغربی خاتون کی رائے تو یہ ہے کہ ہم عورتوں کی اندھی آزادی پر پابندی لگانی پڑے گی لیکن مشرق کی عورتیں اس اندھی آزادی کی ظاہری چمک دمک سے متاثر ہو کر اسی دلدل میں دھنستی چلی جا رہی ہیں اور انہوں نے وہ روش اختیار کر رکھی ہے جو دراصل انسائیت کی توہین ہے۔

پردے میں برقعہ کے استعمال سے جسم اور چہرہ چھپ جاتا ہے لیکن ہاتھ کھلے رہتے ہیں۔ اسلامی تعلیم کی رو سے عورتوں کو حجاب کے استعمال کے ساتھ ساتھ دستانہ بھی استعمال کرنے چاہئیں​
 

Lovely Eyes

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Staff member
Charismatic
Expert
Writer
Popular
Emerging
Fantabulous
The Iron Lady
Joined
Apr 28, 2018
Local time
10:12 PM
Threads
267
Messages
1,147
Reaction score
1,887
Points
703
Gold Coins
2,479.83
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
جزاک اللہ۔۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو دین کی صحیح سمجھ عطا فرمائے آمین
جزاک اللہ خیر
اللہ پاک ہم سب ہدایت عطا فرمائے۔ آمین
جزاک اللہ خیرا
بہت ہی عمدہ مثال ہے،
شئیرنگ کے لیے شکریہ
(y)
پیاری شئیرنگ
آپ سب کا بے حد شکریہ​
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks