بلڈ پریشر اور دماغی امراض

Doctor

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Top Poster Of Month
Joined
Apr 25, 2018
Local time
1:17 AM
Threads
842
Messages
12,145
Reaction score
14,148
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,353.37
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
مسلسل ہائی بلڈ پریشر کے مریض اگر بلڈ پریشر کو معمول پر لاکر 120 پر محدود رکھیں تو اس سے عمر کے ساتھ ساتھ دماغی کمزوری، یادداشت میں کمی اور الزائیمر تک لے جانے والی کیفیات کو بڑی حد تک ختم کیا جاسکتا ہے۔ سادہ الفاظ میں بلڈ پریشر کو صحت مند پیمانے تک باندھے رکھنے سے دماغی صلاحیت اور یادداشت میں کمی کا خدشہ 19 فیصد اور ڈیمنشیا کا خطرہ 15 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔





شکاگو میں الزائیمر پر سالانہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے الزائیمر ایسوسی ایشن سے وابستہ پروفیسر ہیدر سنائڈر نے کہا کہ ان کی تحقیق کے حتمی نتائج میں اگرچہ مزید کچھ برس لگ جائیں گے لیکن اب تک کے مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ بلڈ پریشر کو صحتمند سطح پر رکھنا الزائیمر اور دیگر امراض سے بچاؤ میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

اس وقت صرف امریکہ میں ہی الزائیمر کے 50 لاکھ سے زائد مریض موجود ہیں اور ان میں سے دو لاکھ مریضوں کی عمر 65 سال سے کم ہے۔ اب تک یہ مرض لاعلاج ہے لیکن صحت مند اندازِ حیات اس کی رفتار کو کم کرسکتا ہے۔ اس ضمن میں سسٹولک بلڈ پریشر انٹروینشن ٹرائل یا اسپرنٹ نامی ایک بہت بڑا سروے کیا گیا ۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اگر بلڈ پریشر 120 یا اس سے کم ہو تو فالج، امراضِ قلب، گردے کے امراض اور دیگر بیماریوں کا خطرہ بہت حد تک کم ہوجاتا ہے۔


اسی وجہ سے اب ماہرین نے صحت مند فشارِ خون کی شرح 120 یا اس سے کم رکھی ہے ورنہ پہلے یہ 140 تک تھی۔ اس مطالعے میں بلڈ پریشر کم رکھنے اور ڈیمنشیا کے درمیان تعلق کا بھی مطالعہ کیا گیا تھا۔ اس کےلیے 9361 افراد کو بھرتی کیا گیا جن کی اوسط عمر 68 تھی۔ ان میں سے نصف کا بلڈ پریشر کسی نہ کسی طرح 120 تک محدود رکھا گیا جبکہ دیگر نصف افراد کو بلڈ پریشر کا معیاری علاج فراہم کیا گیا جسے اسٹینڈرڈ تھراپی کہا جاتا ہے۔


ان میں سے جن افراد نے اپنا بلڈ پریشر 120 یا اس سے کم رکھا گیا تھا ان میں ڈیمنشیا اور الزائیمر کا کوئی امکان سامنے نہیں آیا اور ہائی بلڈ پریشر والے افراد میں ذہنی و دماغی انحطاط کی شرح زیادہ دیکھی گئی۔ اس طرح بلڈ پریشر کو قابو میں رکھنا بہت ضروری ہے۔


ماہرین کا کہنا ہے کہ بلڈ پریشر کی کمی کےلیے باقاعدہ ورزش، نمک کا کم استعمال اور سبزیوں اور پھلوں کا استعمال بہت مفید ہوتا ہے۔
 

PakArt UrduLover

in memoriam 1961-2020، May his soul rest in peace
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
ITD Observer
ITD Solo Person
ITD Fan Fictionest
ITD Well Wishir
ITD Intrinsic Person
Persistent Person
ITD Supporter
Top Threads Starter
Joined
May 9, 2018
Local time
9:17 PM
Threads
1,354
Messages
7,660
Reaction score
6,959
Points
1,508
Location
Manchester U.K
Gold Coins
112.18
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Thread Highlight Unlimited
بلڈپریشر قابو میں رکھیں اور دماغی امراض سے بچیں
مسلسل ہائی بلڈ پریشر کے مریض اگر بلڈ پریشر کو معمول پر لاکر 120 پر محدود رکھیں
لندن(نیٹ نیوز) تو اس سے عمر کے ساتھ ساتھ دماغی کمزوری، یادداشت میں کمی اور الزائمر تک لے جانیوالی کیفیات کو بڑی حد تک ختم کیا جاسکتا ہے ۔ سادہ الفاظ میں بلڈ پریشر کو صحت مند پیمانے تک باندھے رکھنے سے دماغی صلاحیت اور یادداشت میں کمی کا خدشہ 19 فیصد اور ڈیمنشیا کا خطرہ 15 فیصد تک کم ہوجاتا ہے ۔ الزائمر ایسوسی ایشن سے وابستہ پروفیسر ہیدر سنائیڈر نے کہا ان کی تحقیق کے حتمی نتائج میں اگرچہ مزید کچھ برس لگ جائیں گے لیکن اب تک کے مطالعے سے معلوم ہوا کہ بلڈ پریشر کو صحتمند سطح پر رکھنا الزائمر اور دیگر امراض سے بچاؤ میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے ، واضح رہے کہ اس وقت صرف امریکہ میں ہی الزائمر کے 50 لاکھ سے زائد مریض موجود ہیں اور ان میں سے دو لاکھ مریضوں کی عمر 65 سال سے کم ہے۔
 

Doctor

Thread Starter
⭐⭐⭐⭐⭐⭐
Charismatic
Designer
Expert
Writer
Popular
King of Alkamunia
ITD Supporter 🏆
Proud Pakistani
الکمونیا میں تو ایسا نہیں ہوتا
ITD Developer
Top Poster
Top Poster Of Month
Joined
Apr 25, 2018
Local time
1:17 AM
Threads
842
Messages
12,145
Reaction score
14,148
Points
1,801
Age
47
Location
Rawalpindi
Gold Coins
3,353.37
Get Unlimited Tags / Banners
Permanently Change Username Color & Style.
Get Unlimited Tags / Banners
Get Unlimited Tags / Banners
Thread Highlight Unlimited
Change Username Style.
بلڈپریشر قابو میں رکھیں اور دماغی امراض سے بچیں

مسلسل ہائی بلڈ پریشر کے مریض اگر بلڈ پریشر کو معمول پر لاکر 120 پر محدود رکھیں
لندن(نیٹ نیوز) تو اس سے عمر کے ساتھ ساتھ دماغی کمزوری، یادداشت میں کمی اور الزائمر تک لے جانیوالی کیفیات کو بڑی حد تک ختم کیا جاسکتا ہے ۔ سادہ الفاظ میں بلڈ پریشر کو صحت مند پیمانے تک باندھے رکھنے سے دماغی صلاحیت اور یادداشت میں کمی کا خدشہ 19 فیصد اور ڈیمنشیا کا خطرہ 15 فیصد تک کم ہوجاتا ہے ۔ الزائمر ایسوسی ایشن سے وابستہ پروفیسر ہیدر سنائیڈر نے کہا ان کی تحقیق کے حتمی نتائج میں اگرچہ مزید کچھ برس لگ جائیں گے لیکن اب تک کے مطالعے سے معلوم ہوا کہ بلڈ پریشر کو صحتمند سطح پر رکھنا الزائمر اور دیگر امراض سے بچاؤ میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے ، واضح رہے کہ اس وقت صرف امریکہ میں ہی الزائمر کے 50 لاکھ سے زائد مریض موجود ہیں اور ان میں سے دو لاکھ مریضوں کی عمر 65 سال سے کم ہے۔
 
Joined
Jun 14, 2018
Local time
11:17 PM
Threads
10
Messages
177
Reaction score
228
Points
54
Location
dubai
Gold Coins
1.53
thanx for informative sharing
 
Top
AdBlock Detected

We get it, advertisements are annoying!

Sure, ad-blocking software does a great job at blocking ads, but it also blocks useful features of our website. For the best site experience please disable your AdBlocker.

I've Disabled AdBlock    No Thanks