ہائی بلڈ پریشر کو قابو کرنے والی عام دستیاب غذائیں

Author
Lovely Eyes

Lovely Eyes

☆☆☆☆☆
Joined
Apr 28, 2018
Threads
40
Messages
154
Likes
183
Points
59
#1
پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہائی بلڈ پریشر کا مرض تیزی سے پھیل رہا ہے اور اس کےلیے مریض ہر ماہ سینکڑوں اور ہزاروں روپے کی دوائیں کھاتے ہیں۔ لیکن بعض غذاؤں کے مسلسل استعمال سے ہائی بلڈ پریشر کو بہت بہتر انداز میں قابو میں رکھا جاسکتا ہے۔ بلڈ پریشر میں مسلسل اضافہ امراضِ قلب، فالج اورذیابیطس کی وجہ بن سکتا ہے۔ اسی لیے ہائی بلڈ پریشر (بلند فشارِ خون) یا ہائپر ٹینشن کو ’’خاموش قاتل‘‘ بھی کہا جاتا ہے۔



ذیل میں بعض ایسی غذاؤں کی فہرست دی جارہی ہے جن کی اکثریت پاکستان میں عام دستیاب ہے اور یہ غذائیں ہر ایک کی پہنچ میں بھی ہیں۔ ان کا استعمال بلڈ پریشر کو قابو میں رکھنے میں مدد دیتا ہے۔

بیریاں



بلیو بیری اور اسٹرابیری میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس اور اینتھوسائننس جیسے فلے وو نوئیڈ بلڈ پریشر کو معمول پر رکھتے ہیں۔ ایک تحقیق میں بلڈ پریشر کے شکار 34000 ہزار افراد کو بطورِ خاص بلیو بیریز کھلائی گئیں تو ان میں بلڈ پریشر کم ہونے کی شرح 8 فیصد تک نوٹ کی گئی۔

کیلا



کیلے میں موجود پوٹاشیم، نمک کے برے اثرات زائل کرکے خون کی رگوں اور شریانوں کی دیواروں کو طاقت دیتا ہے۔ اس کے علاوہ ایواکاڈو (مگرناشپتی)، مشروم، ٹماٹر، ٹیونا مچھلی اور پھلیوں میں بھی پوٹاشیم پایا جاتا ہے۔

چقندر



اگر آپ ذیابیطس کے مریض نہیں تو دل کو طاقت دینے اور بلڈ پریشر کو صحت مند رکھنے میں چقندر کے رس کا کوئی ثانی نہیں۔ روزانہ ایک کپ چقندر کا رس پینے سے صرف ایک ہفتے میں اس کے بہترین نتائج سامنے آنا شروع ہوجاتے ہیں۔ اس کی وجہ نائٹرئٹس مرکبات کا جادو ہے جو چقندر میں کوٹ کوٹ کر بھرا ہوتا ہے۔

گہری رنگت والی چاکلیٹ (ڈارک چاکلیٹ)



جس چاکلیٹ میں کوکووا کی مقدار 70 فیصد یا اس سے زائد ہوگی وہ گہرے رنگت والی چاکلیٹ کہلاتی ہے اور اس میں موجود کئی کیمیکلز خون کا دباؤ معمول پر رکھتے ہیں۔ ماہرین روزانہ ایک اونس گہری چاکلیٹ تجویز کرتے ہیں۔

کیوی



ایک طویل مطالعے کے بعد ثابت ہوا ہے کہ سیب اور کیوی پھل ہائی بلڈ پریشر کو معمول پر رکھتے ہیں۔ اسی طرح روزانہ ایک سیب اور کیوی پھل کھانے کے بہت مفید اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

تربوز



تربوز میں موجود ایک امائنو ایسڈ ’سٹرولائن‘ (Citrulline) پایا جاتا ہے جو خون کی رگوں کی لچک بڑھاتا ہے۔ اس سے خون کا بہاؤ ہموار ہوتا ہے اور بلڈ پریشر معمول پر رہتا ہے۔ تربوز دل کو تندرست رکھنے میں بھی بہت مؤثر ثابت ہوا ہے۔

دلیہ



دلیہ ریشہ دار غذا ہے جس میں بی ٹا گلوکان پایا جاتا ہے۔ یہ مرکب کولیسٹرول کم کرتا ہے اور بلڈ پریشر کو بھی قابو میں رکھتا ہے۔ اس ضمن میں ایک دو نہیں بلکہ 28 تحقیقی سروے ہوئے ہیں۔ اسی وجہ سے دلیے کو اپنی غذا کا لازمی جزو بنائیے۔

ہرے پتوں والی سبزیاں



پالک، گوبھی، کیل، اور دیگر سبز پتوں والی سبزیوں میں نائٹریٹ مرکبات موجود ہوتے ہیں۔ اگر دن میں ایک مرتبہ، سبز پتوں والی سبزیاں ایک یا دو مرتبہ کھالی جائیں تو اس کے مثبت اثرات 24 گھنٹے تک برقرار رہتے ہیں۔

لہسن



لہسن کا استعمال جسم میں نائٹرک آکسائیڈ کی سطح کو بڑھاتا ہے۔ اس میں موجود ایک اہم مرکب ’ایلیسین‘ کئی بیماریوں کو روکتا ہے۔ یہ دل کی رگوں کو معمول پر رکھتا ہے اور بلڈ پریشر کو بڑھنے نہیں دیتا۔ لہسن کو کئی کھانوں میں ملاکر کھایا جاسکتا ہے۔

پھلیاں اور دالیں



گہری رنگت والی پھلیاں اور دالیں ایک جانب تو پروٹین اور فائبر کا خزانہ ہیں لیکن دوسری جانب ان میں موجود کئی کیمیکلز بلڈ پریشر کو قابو میں رکھتے ہیں۔ اس لیے دالوں کا سوپ، سلاد اور دیگر اشیا ضرور استعمال کرنی چاہئیں۔

دہی



امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کے مطابق دہی بلڈ پریشر کو معمول پر رکھتا ہے اور اس سے خواتین زیادہ فائدہ اٹھاسکتی ہیں۔ ایک سروے میں ثابت ہوا کہ اگر 18 سے 30 سال تک کی خواتین روزانہ پابندی سے دہی کا استعمال کریں تو ہائی بلڈ پریشر کا خطرہ 20 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔

دارچینی



باورچی خانوں میں موجود عام شے دارچینی کو ہرگز نظر انداز نہ کیجئے۔ دارچینی ایک جانب تو شوگر کو ٹھیک کرتی ہے تو دوسری جانب بلڈ پریشر میں انتہائی مفید ہے۔ اضافی طور پر یہ ٹائپ ٹو ذیابیطس کو قابو رکھنے میں بھی مددگار ثابت ہوئی ہے۔

 

SILENT.WALKER

Staff member
☆☆☆☆☆
ITD Moderator
Contest Winner
Joined
May 11, 2018
Threads
30
Messages
265
Likes
311
Points
153
Location
LAHORE, PAKISTAN
#2
بہت عمدہ شیئرنگ
 
Show only guests
Top