آئیں کہانی لکھیں

Sabih Tariq

★★★☆☆
Dynamic Brigade
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
32
Messages
1,155
Likes
1,714
Points
417
Location
Central
#61
مثل مشہور ہے کہ سانپ کے پاؤں نہیں ہوتے
:eek::eek:
۔
۔
۔
سوری
۔
۔
۔
جھوٹ کے پاؤں نہیں ہوتے
:pagal::pagal::pagal::pagal:
۔
۔
اس لئے صبیح بھائی کی "ریڈی میڈ" کہانیوں میں جو جال یہ دوسروں کے لئے تیار کرتے ہیں اکثر اُس میں خود ہی منہ کے بل گرے ہوئے ملتے ہیں

:pagal::pagal::pagal:
جیسے شکاری شام کو جال لگا کر گھر چلیں جائیں تو دوسری صبح واپس آکر دیکھیں تو اس میں کئی قسم کے پرندے وغیرہ پھنسے ہوئے ہوتے ہیں ، صبیح بھائی بھی اکثر ایسے ہی کسی جال میں "آرام فرما" ہوتے ہیں
:pagal::pagal:
انکے خیال میں انہوں نے جال میں کسی کو پھانسا ہوا ہوتا ہے اور جب آنکھ کھلتی ہے تو پتہ چلتا ہے کہ
؎
لو آپ اپنے دام میں صیاد آگیا

بٹن دباکے
:pagal::pagal::pagal::pagal:
کسی نے کہا کہ دروازے وچ انگلی آئے تو اووی ساہ کڈ لیندی اے۔۔۔:Dآپکی ان پوسٹ کی وجہ دراصل کہانیوں کا ردعمل ہے :D۔
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#62
:pagal:
کسی کو کنفرم سانپ ڈکلئیرکرنا اور پھر مہر لگانے کے لیے منصف کا خود سانپ کی جنس سے ہونا ضروری ہے۔
:D
ہم ایسا ہرگز نہ کرتے اگر آپ خود سانپوں میں اتنی دلچسپی کا مظاہرہ نہ کرتے

کبھی "جن"جن جملو خان،شکتیاں، کھجل سائیں ، ۔ڈوئل پرسنلیٹی اور کسی کو کنفرم سانپ ڈکلئیر کرنا۔۔۔۔:pagal:
آپ بری طرح پزل ہوکر بہکی بہکی باتیں کرتے ہوئے فورم پر تخریب کاری پھیلا رہی ہیں:pagal:۔
میں بالکل بھی پزل نہیں ہوں، ڈر تو آپ رہے ہیں کہ کہیں آپکا پول سارے فورم پہ کھل نہ جائے
:pagal:
لیکن ڈریں نہیں ہم اس سیکشن کے علاوہ کہیں بھی آپ کی حقیقت بیان نہیں کریں گے
:p
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#63

Sabih Tariq

★★★☆☆
Dynamic Brigade
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
32
Messages
1,155
Likes
1,714
Points
417
Location
Central
#64
ہم ایسا ہرگز نہ کرتے اگر آپ خود سانپوں میں اتنی دلچسپی کا مظاہرہ نہ کرتے

:p
:pagal:یعنی آپ نے تسلیم کرلیا کہ آپ وہ والی منصف ہیں
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#65
:pagal:یعنی آپ نے تسلیم کرلیا کہ آپ وہ والی منصف ہیں
نہیں ، ہرگز نہیں، ہم نے آپکو سانپ ڈکلیئر کرنے کی بات کی ہے،
مصنف تو ہم ہیں ہی نہیں، کیونکہ مصنف رائٹر ہوتے ہیں، اور وہ آپ ہیں
:rolleyes:
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#66
کیونکہ یہ کہانی افراتفری کا شکار ہو کر بے ربط ہو چکی ہے اور کسی بھی منطقی انجام پر پہنچنے سے پہلے ہی اسکی کئی برانچز کھل گئی ہیں لہذا اسے اسکے حال پہ چھوڑتے ہوئے، ہمیں نئی کہانی کا آغاز کرنا چاہیئے:
:cool:
اب کہانی کچھ یوں شروع ہوتی ہے کہ۔۔۔۔ایک دفعہ کا ذکر ہے آئی ٹی درسگاہ پر بہت ہی اہتمام سے انٹرویو کا آغاز کیا گیا، زاہد انکل نے بہت ہی محنت سے سوالنامہ ترتیب دیا اور پھر باقاعدہ بغیر دھاندلی والی پولنگ کے بعد جناب صبیح طارق کو یہ اعزاز حاصل ہوا کہ وہ اپنے بارے میں جان سکیں، اوہ سوری، کہ سب انکے بارے میں جان سکیں
:geek:
لیکن پھر ہوا کچھ یوں کہ سوالات دیکھ کر صبیح بھائی کی سٹی بٹی گم ہو گئی، کیونکہ میاں مٹھو بھائی کے باقاعدہ پول کھلنے کے تمام انتظامات جو ہو گئے تھے
;):p
اب دن پہ دن گزرنے شروع ہوگئے، وادی الکمونیا میں بے چینی کی کیفیت پیدا ہونا شروع ہوگئی، ہر گزرتا دن اس کیفیت میں اضافہ کرتا گیا، مگر جوابات تو دور مٹھو بھائی نے تو ادھر ادھر کے علاقوں(سیکشنز) میں جانے سے گریز برتنا شروع کر دیا، ہماری انٹیلیجینس رپورٹ کے مطابق مٹھو بھائی صبح کے وقت میں الکمونیا میں دور بین کی مدد سے تانکا جھانکی کرتے ہوئے پائے گئے ، مگر جیسے ہی لوگوں کی آمدورفت کا سلسلہ شروع ہوتا ،وہ اپنی دور بین سمیت غائب ہو جاتے ،
یہ تمام حالات ڈاکٹر انکل کی نظر سے پوشیدہ نہیں تھے ، انہوں نے مٹھو بھائی سے اس سب کی وجہ جاننے کے لیئے رابطے کی ہر ممکن کوشش کی، لیکن رابطہ نہ ہو سکا اب تو ڈاکٹر انکل کو کچھ پریشانی بھی ہوئی تو انہوں نے مٹھو بھائی سے ملنے انکے گھر جانے کا فیصلہ کیا اور الکمونیا کے شمال کی سمت واقع جنگلات کا رخ کیا، جہاں جنگلات کے وسط میں جنگل نگری کے نام سے ایک بہت ہی گنجان آباد علاقہ موجود تھا اور مٹھو بھائی وہیں مستقل سکوت اختیار کیئے ہوئے تھے
خیر مسلسل پانچ دن اور پانچ راتیں اپنے کھوتے پہ سوار، مطلب اپنے گھوڑے پہ سوار انتہائی تھکا دینے والے سفر کے بعد جب چھٹے دن دوپہر کے قریب ڈاکٹر انکل صبیح بھائی کے گھر پہنچے تو منزل پہ پہنچ جانے کی خوشی اور مٹھو بھائی کی ایسی مشکوک حرکات کی تشویش کے باعث تھکن کو پس پشت ڈالتے ہوئے جلدی سے دروازہ کھٹکھٹانے کے لیئے جیسے ہی ہاتھ آگے بڑھایا، مٹھوبھائی انتہائی جلدی میں دروازہ کھول کر باہر نکل آئے اور دستک جو دروازے پہ ہونی تھی اسکا نشانہ وہ خود بن گئے
(اگر کنجوسی نہ کرتے اور ڈور بیل لگوا لیتے تو اس اتفاقی حملے سے بچ جاتے )
:pagal:

(یہاں تک کی اطلات ہم نے سیکرٹ سروسز سے حاصل کر لی ہیں ، لیکن اب ہم چاہتے ہیں کہ آگے کا احوال ڈاکٹر انکل ہمیں خود بتائیں کہ مٹھو بھائی نے انٹرویو میں ابھی تک جوابات نہ دینے کی کیا وجہ بتائی اور انکل کی خاطر تواضع کیسے کی اور بھی اگر کچھ سیکرٹس معلوم ہوئے ہوں تو وہ بھی)

:rolleyes:

Doctor Doctor Sabih Tariq Sabih Tariq
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#67
صبیح مٹھو بھائی بگولے کی طرح گھر سے باہر نکلے مگر انکی کھوپڑی پر پڑنے والی دستک نے انکے چودہ تو نہیں البتہ سات طبق ضرور روشن کر دیئے تھے
:geek::geek::geek::geek::geek:
اب وہ ڈاکٹر کوحیرت سے آنکھیں پھاڑے ایسے گھور رہے تھے جیسے موبائی لائی لانگ میں موبائل گم ہونے کے بعد انکی حالت ہوگئی تھی
:pagal::pagal::pagal::pagal::pagal:

ارے ڈاکٹربھائی آآپ پ یہاں کیسے ۔ ۔ میرا مطلب ہے کیا کر رہے ہیں
صبیح مٹھو بھائی نے بوکھلائے ہوئے انداز میں کہا

دیکھ نہیں رہے دروازہ کھٹکھٹانے کی کوشش میں آپ کی کھوپڑی شریف کھٹکھٹا چکا ہوں۔ ۔ ۔بس یہی کر رہا تھا
ڈاکٹر نے مسکراتے ہوئے جواب دیا
;););););)

جی جی ہاں ۔ ۔ نہیں وہ میں یہی تو پوچھ رہا تھا کہ یہ زحمت آپ نے کیوں کی
صبیح مٹھو بھائی نے سٹپٹاتے ہوئے کہا

کیوں؟ اس کام کے جملہ حقوق آپ نے کسی اور کو دے رکھے ہیں کہ وہ ہر روز آپ کی ٹنڈ شریف پر دستک دے
:D:D:D:D
ڈاکٹر نے اپنی ہنسی دباتے ہوئے پوچھا


نہیں میرا مطلب ہے آپ یہاں اچانک ۔ ۔
صبیح نے اپنے آپ کو سنبھالتے ہوئے قدرے پرسکوں انداز میں کہا۔ ۔
ساتھ ہی چہرہ دوسری جانب پھیر کر آہستہ سے کہا ۔ ۔ پہلے سے بتادیتے تو بندہ اِدھر اُدھر تو ہوجاتا
o_Oo_Oo_Oo_Oo_Oo_O


بس جناب فورم سے آپ ایسے غائب غائب سے ہوگئے ہیں جیسے سمجھ کر لو متھے کنال دے کے لیکن
;););););)
تو میں نے سوچا خیریت ہی معلوم کر آؤں جناب کی
ڈاکٹر نے مسکراتے ہوئے کہا

بس ڈاکٹر بھائی کیا بتاؤں میں آپ کو کچھ دنوں سے میں ایک ایسی مصیبت میں گرفتار ہوں کہ کسی کو بتا بھی نہیں سکتا اور لوگوں سے چھپا بھی نہیں سکتا
صبیح مٹھو بھائی اچانک غمناک لہجے میں گویا ہوئے
:cry::cry::cry::cry:


ارے ارے ارے ۔ ۔ ایسا کیا ہوگیا بھائی آپ ہمیں بتائیں ہوسکتا ہے ہم آپ کی کچھ مدد کرسکیں
:unsure::unsure::unsure::unsure::unsure::unsure:

ڈاکٹر نے تشویش ناک انداز میں کہا۔۔۔۔۔

جاری ہے۔۔۔۔۔۔
 
Joined
Jul 11, 2018
Threads
0
Messages
5
Likes
0
Points
6
Location
Lahore
#68
Jaldi Se end karo Waiting Curiously
 

sara

☆☆☆☆☆
Joined
Jun 14, 2018
Threads
6
Messages
77
Likes
57
Points
18
Location
dubai
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#70
Sabih Tariq Sabih Tariq
ارے بھائی بتائیں تو آخر ایسی کیا مشکل پیش آگئی کہ ڈاکٹر انکل نے بھی کہانی یہیں چھوڑ دی اور خود بھی آپکی پریشانی کا حل ڈھونڈنے چلے گئے

:rolleyes:
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#71
Sabih Tariq Sabih Tariq
ارے بھائی بتائیں تو آخر ایسی کیا مشکل پیش آگئی کہ ڈاکٹر انکل نے بھی کہانی یہیں چھوڑ دی اور خود بھی آپکی پریشانی کا حل ڈھونڈنے چلے گئے

:rolleyes:
میں نے تو پوری ایک قسط لکھی ہے
:hathora::hathora::hathora::hathora:
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#72
میں نے تو پوری ایک قسط لکھی ہے
:hathora::hathora::hathora::hathora:
اوہ، اچھا میں سمجھی کہ کوئی مسئلہ ہوگیا ہے جو بات ادھوری چھوڑ کے چلے گئے اور بتایا ہی نہیں کہ صبیح بھائی کے ساتھ کیا معاملہ پیش آیا کہ وہ غیر حاضر ہیں
:D
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#73
اوہ، اچھا میں سمجھی کہ کوئی مسئلہ ہوگیا ہے جو بات ادھوری چھوڑ کے چلے گئے اور بتایا ہی نہیں کہ صبیح بھائی کے ساتھ کیا معاملہ پیش آیا کہ وہ غیر حاضر ہیں
:D
کوئی حال نہیں کاکی جی آپ کا بھی
ساری قسط کا مزہ کرکرا کردیا
:maro::maro::maro:
بٹن دباکے


:pagal::pagal::pagal::pagal:
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#74
کوئی حال نہیں کاکی جی آپ کا بھی
ساری قسط کا مزہ کرکرا کردیا
:maro::maro::maro:
بٹن دباکے


:pagal::pagal::pagal::pagal:
میرا بھلا کیا قصور ہے اس میں، مجھے لگا کہ آپ ہمیں اپنی آپ بیتی سنانے لگے ہیں لیکن آپ تو کہانی کی قسط لکھ رہے تھے۔۔اففففف
:rolleyes:
اب ہمیں کیسے معلوم ہوگا کہ صبیح بھائی نے آپ کو غیر حاضری کی کیا وجہ بتائی
:(
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#75
صبیح مٹھو بھائی بگولے کی طرح گھر سے باہر نکلے مگر انکی کھوپڑی پر پڑنے والی دستک نے انکے چودہ تو نہیں البتہ سات طبق ضرور روشن کر دیئے تھے
:geek::geek::geek::geek::geek:
اب وہ ڈاکٹر کوحیرت سے آنکھیں پھاڑے ایسے گھور رہے تھے جیسے موبائی لائی لانگ میں موبائل گم ہونے کے بعد انکی حالت ہوگئی تھی
:pagal::pagal::pagal::pagal::pagal:


ارے ڈاکٹربھائی آآپ پ یہاں کیسے ۔ ۔ میرا مطلب ہے کیا کر رہے ہیں
صبیح مٹھو بھائی نے بوکھلائے ہوئے انداز میں کہا


دیکھ نہیں رہے دروازہ کھٹکھٹانے کی کوشش میں آپ کی کھوپڑی شریف کھٹکھٹا چکا ہوں۔ ۔ ۔بس یہی کر رہا تھا
ڈاکٹر نے مسکراتے ہوئے جواب دیا
;););););)


جی جی ہاں ۔ ۔ نہیں وہ میں یہی تو پوچھ رہا تھا کہ یہ زحمت آپ نے کیوں کی
صبیح مٹھو بھائی نے سٹپٹاتے ہوئے کہا


کیوں؟ اس کام کے جملہ حقوق آپ نے کسی اور کو دے رکھے ہیں کہ وہ ہر روز آپ کی ٹنڈ شریف پر دستک دے
:D:D:D:D
ڈاکٹر نے اپنی ہنسی دباتے ہوئے پوچھا



نہیں میرا مطلب ہے آپ یہاں اچانک ۔ ۔
صبیح نے اپنے آپ کو سنبھالتے ہوئے قدرے پرسکوں انداز میں کہا۔ ۔
ساتھ ہی چہرہ دوسری جانب پھیر کر آہستہ سے کہا ۔ ۔ پہلے سے بتادیتے تو بندہ اِدھر اُدھر تو ہوجاتا
o_Oo_Oo_Oo_Oo_Oo_O



بس جناب فورم سے آپ ایسے غائب غائب سے ہوگئے ہیں جیسے سمجھ کر لو متھے کنال دے کے لیکن
;););););)
تو میں نے سوچا خیریت ہی معلوم کر آؤں جناب کی
ڈاکٹر نے مسکراتے ہوئے کہا


بس ڈاکٹر بھائی کیا بتاؤں میں آپ کو کچھ دنوں سے میں ایک ایسی مصیبت میں گرفتار ہوں کہ کسی کو بتا بھی نہیں سکتا اور لوگوں سے چھپا بھی نہیں سکتا
صبیح مٹھو بھائی اچانک غمناک لہجے میں گویا ہوئے
:cry::cry::cry::cry:



ارے ارے ارے ۔ ۔ ایسا کیا ہوگیا بھائی آپ ہمیں بتائیں ہوسکتا ہے ہم آپ کی کچھ مدد کرسکیں
:unsure::unsure::unsure::unsure::unsure::unsure:


ڈاکٹر نے تشویش ناک انداز میں کہا۔۔۔۔۔

جاری ہے۔۔۔۔۔۔
ہممم۔۔۔اچھا آپ اندرتو تشریف لائیے (صبیح بھائی کو اتنی دیر ڈاکٹر انکل کو دروازے پر کھڑا رکھنے کے بعد اپنی غلطی کا احساس ہوا)
:rolleyes:
بڑی جلدی خیال نہیں آگیا (ڈاکٹر انکل نے محض سوچ پہ ہی اکتفا کیا)
:maro:
صبیح بھائی نے ڈاکٹر انکل کو بیٹھک میں بٹھایااور انکے لیئے چائے وغیرہ کا بندوبست کرنے چلے گئے،
:D

یہاں تک تو سب نارمل تھا، لیکن جب ڈاکٹر انکل کو صبیح بھائی کا انتظار کرتے کرتے پورا گھنٹہ گزر گیا تو انہیں بہت تشویش ہوئی کہ آخر صبیح بھائی چائے بنا رہےہیں یا پائے ،
:sneaky:
ڈاکٹر انکل کو گھر میں داخل ہوتے ہی یہ احساس تو ہو گیا تھا کہ گھر میں صبیح بھائی کہ علاوہ اور کوئی نہیں ہے، اس لیئے کچھ ہچکچاہٹ کے باوجود، اندازے سے کچن کا رخ کیا، لیکن وہ کچن میں موجود نہیں تھے البتہ ساس پین میں چائے بالکل جل چکی تھی، ساتھ ہی کباب فرائے ہونے کے لیئے رکھے تھے جو کوئلہ ہو گئے تھے، انتہائی حیرت کے عالم میں ڈاکٹر انکل نے چولہے بند کیئے اور صبیح بھائی کو ڈھونڈ تے ہوئے آواز دینے لگے۔۔۔
o_O
صبیح بھائی۔۔۔صبیح بھائی۔۔۔۔۔۔۔۔صب ب
(جیسے ہی انکل کچن سے نکل کر سامنے نظر آنے والے دروازے پہ دستک دیتے ہوئے داخل ہوئے ، خوف سے انکی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئیں ، سامنے ہی صبیح بھائی پنکھے سے الٹے لٹکے ہوئے تھے اور انکے چہرے پہ مختلف رنگوں کی لکیریں پڑی تھیں اور لباس ، اس لباس سے یکسر مختلف تھا جس میں انکل نے انہیں دیکھا تھا، اب وہ کوئی ٹارزن نما چیز بنے ہوئے تھے اور منہ سے عجیب و غریب آوازیں نکال رہے تھے ، انکے انداز سے ایسا محسوس ہوتا تھا جیسے کسی سے بہت ہی اہم ٹاپک پہ محو گفتگو ہوں، لیکن سامنے کوئی نظر نہیں آرہا تھا)
:eek::eek:
یہ صورتحال ڈاکٹر انکل کے لیئے انتہائی غیر متوقع تھی اور انکا خوفزدہ ہو نا فطری تھا۔۔بہرحال وہ ایسی حالت میں صبیح بھائی کو چھوڑ کے جا تو نہیں سکتے تھے اور مسئلے کا کوئی حل بھی نکالنا تھا ، ایسے میں انہیں اپنے قابل بھروسہ سیکرٹ سرونٹ ، سوری سوری سیکرٹ ایجینٹ ایکسٹو کا خیال آیا کہ اگر وہ کھجل سائیں کی قید سے آزاد ہوگئے ہوتے تو اس وقت دونوں ساتھ ہوتے اور اس معاملے کو سلجھانے کی کوشش کرتے۔۔خیر اب کیا ہو سکتا تھا
:unsure::unsure:
ڈاکٹر انکل کو خیال آیا کہ کیوں نہ اے ایم بھائی سے رابطہ کیا جائے، آخر ایک لمبا عرصہ کھجل سائیں کے ساتھ رہے ہیں ، ہو سکتا ہے اس مشکل کا کوئی حل انکے پاس ہو، لیکن اگر ابھی سےسب کچھ بتا دیا تو کہیں موصوف آنے سے انکار ہی نہ کردیں اسلیئے ڈاکٹر انکل نے اپنے تھیلے سے کپڑوں نے نیچے چھپے ہوئے کوے کو نکالا اور ایک پیغام لکھ کر اسے عارف والا روانہ کر دیا۔۔۔ لیکن جو خط کوے کو دیا گیا اس میں اے ایم کو یہاں بلانے کے لیئے جو مقصد لکھا وہ کم از کم وہ نہیں تھا ، جس کے لیئے انہیں بلایا جا رہا تھا۔۔۔۔
:devilish::devilish::devilish:
(جاری ہے)
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#76
اثر ہے تیرے اعجازِ مسیحائی کا اے کاکی
الکمونیا سے کوا چلا عارف والا تک آیا
:pagal::pagal::pagal:
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#77
اثر ہے تیرے اعجازِ مسیحائی کا اے کاکی
الکمونیا سے کوا چلا عارف والا تک آیا
:pagal::pagal::pagal:
ابھی عارف والا پہنچا ہی کہاں ہے مجھے ڈر ہے کہ کہیں کوا راہ بھٹک کر لاہور ہی نہ پہنچ جائے، اور اگر ایسا ہو گیا تو آپ کا بھیجا ہوا پیغام بھی کوے کے ساتھ ساتھ میر بھائی ہضم کر جائیں گے
:rolleyes:
 

UrduLover

★★★★★
Dynamic Brigade
ITD Express
Designer
Writer
Top Poster Of Month
Joined
May 9, 2018
Threads
486
Messages
2,257
Likes
1,639
Points
704
Location
Manchester U.K
#78
کھجل سایئں بڑی دیر سے کان کو کھجائے جا رہا تھا۔۔۔۔۔کھجاتے کھجاتے انگلی تھک جاتی تو ہتھیلی کان پر رکھ کر ایسے ہلاتا جیسے کسی سوئے ہوئے پیارے کو دھکے دے رہا ہو۔۔۔۔۔۔


میز کی دوسری طرف ماسی مسیبتے وہ اسی کو دیکھے جارہی تھی۔۔۔۔۔اس کا بس نہیں چل رہا تھا کہ وہ اٹھ کر آتی اور اسے جھاڑو ہاتھ میں تھما کر کہتی لو میاں اب اچھی طرح سے کھجا لو جی بھر کے۔۔۔ اسے وہ لوگ بالکل زہر لگتے تھے جو کسی گھر یا محفل کے آداب کا خیال رکھنے کی بجائے اپنا ہی خیال رکھنے کو ترجیح دیتے تھے۔۔۔۔

اسکی طبیعت بھی تو بڑی عجیب سی تھی ۔۔۔۔وہ جتنا دھیان بھٹکانے کی کوشش کرتی نظر اسی کی طرف اٹھ جاتی تھی۔۔۔ اسکی اماں بھی تو اسکی عادتوں سے بڑی تنگ تھیں۔۔۔۔۔۔ “اری منکو اوے ٹھنکو ! سو دفعہ تجھے کہا ہے دوسروں کے معاملات میں مت دخل دیا کر“ مگر وہ کیا کرتی کہ اس کی طبیعت کا کھلنڈرا پن اس سے کہاں چھوٹتا۔۔۔۔۔

ادھر کان کھجانے کی مشقت لگتا ہے بڑی بھاری تھی یا وہ رات کو سویا نہ تھا۔۔۔اب وہ میز پر سر دھرے اونگھ رہا تھا ایک ہاتھ کی انگلی مسلسل کان کے اندر ہی تھی۔۔۔۔۔تاہم اسکی حرکت اب ایسے ختم ہوچکی تھی جیسے چابی بھرے کھلونے کی چابی ختم ہو گئی ہو۔۔

اسکو اونگھتے دیکھ کر ایک کوندا سا اس کے ذہن میں لپکا۔۔۔اور اسکی آنکھیں شرارت سے چمک اٹھیں۔
 

Doctor

★★★★★
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
324
Messages
2,512
Likes
3,055
Points
832
Location
Rawalpindi
#79
کواعارف والا بھیج تو دیا مگر ڈاکٹر نے سوچا کہ نہ جانے کوا کب وہاں پہنچے یا نہ ہی پہنچے اور نہ جانے کب اے ایم یہاں آئے یا پھر نہ ہی آئے ، اس لئے کمک پہنچنے تک خود ہی کچھ کرنا چاہئے۔

اب ڈاکٹر نے جو صبیح بھائی کا قریب جاکر بغور معائنہ کیا تو محسوس ہوا کہ یہ جو غیر مرئی زبان میں گفتگو کی جارہی ہے اس میں بار بار سر پر کسی تکلیف کا اشارہ کیا جارہا تھا

ڈاکتر نے جب صبیح کے سر کا معائنہ کیا تو دکھائی دیا کہ صبیح کے سر پر ایک گومڑ سا ابھرا ہوا ہےجس کا تعلق غالباً موبائی لائی لانگ کے زمانے سے لگ رہا تھا جو آج چوٹ لگنے کی وجہ سے پھر سے تکلیف دے رہا تھا۔

سب سے پہلے تو ڈاکٹر نے جائزہ لیا کہ یہ صبیح اچانک پنکھے سے الٹے کیسے لٹک گئے، معلوم ہوا کہ صبیح نے لومڑ پکڑنے کے لئے ایک پھندا تیار کیا تھا اور ڈاکٹر کے گھر آنے سے پہلے اسی کو ٹیسٹ کرنے میں مصروف تھا اسی لئے شاید ڈاکتر کی اچانک آمد پر پریشان ہوگیا تھا

ڈاکٹر کو چائے کاکہ کر صبیح جلدی میں بھاگا تاکہ لومڑ پکڑنے کے لئے جو جال اور پھندا ٹیسٹ کر رہا تھا وہ چھپادے کہیں ڈاکٹر نے دیکھ لیا تو بات سارے الکمونیا تک پھیل جاتی اور سب نے مذاق ارانا تھا ویسے بھی موبائی لائی لانگ کے بعد سے صبیح بھائی نے بے عزتی سے بچنے کے لئے باہر آناجانا چھوڑ رکھا تھا، اب جو گھبراہٹ میں لومڑ پکڑنے کا پھندا اور باقی سامان چھپانے کی کوشش کی تو پھندا پہلے ہی ٹیسٹ کے لئے تیار تھا تو صبیح بھائی کا پاؤں اسی پھندے میں پھنسا اور صبیح بھائی کھڑاک سے سر کے بل پنکھے کے ساتھ لٹکے ہوئے تھے اور اگلی پچھلی بزتی کا سوچ کر ان کی حالت غیر ہوچکی تھی اور اسی کارن ان کے منہ سے عجیب و غریب آوازیں برآمد ہو رہی تھیں اور اب تو وہ تقریباً بے ہوش ہی ہوچلے تھے، ڈاکٹر چند لمحوں میں ساری صورتحال سمجھ گیا اور بے ساختہ ایک مسکراہٹ ڈاکتر کے لبوں پر آگئی۔

خیر اب جو ہونا تھا وہ تو ہوچکا تھا جو بھی ہو صبیح بھائی الکمونیا سیکرٹ سروس میں "تنویر" کے عہدے پر فائز تھے اس لئے بھی اور انسانیت کے ناطے بھی صبیح کو اس مصیبت سے نکالنا ضروری تھا، اے ایم کے آنے نہ آنے کی کوئی گارنٹی بھی نہیں تھی اس لئے ڈاکٹر نے اپنے جادوئی تھیلے میں سے ہاف راونڈڈ شکاری چاقو نکالا اور اوراسے نیم دائرے کے انداز میں گھماکر اس رسی کی جانب پھینکا جس سے صبیح بھائی الٹے لٹکے ہوئے تھے، ڈاکٹر کا نشانے پر پھینکا ہوا ہاف راؤنڈڈ چاقو رسی کے عین درمیان سے رسی کا کاٹتا ہوا گذر گیا اور فوراً ہی دھڑام کی آواز آئی اور اگلے ہی لمحے صبیح بھائی چاروں شانے چت زمین پر پڑے ہوئے تھے۔

ڈاکٹر نے مسکرا کر زمین پرنیم بے ہوش پڑے ہوئے صبیح کی جانب دیکھا اور اُسے ہوش میں لانے کے لئے نسخہ نمبر 1340 آزمانے کا فیصلہ کیا۔ ۔ ۔ ۔ ۔
 
Author
ناعمہ وقار

ناعمہ وقار

Staff member
★★☆☆☆
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
24
Messages
970
Likes
1,092
Points
254
Location
Islamabad
#80
کواعارف والا بھیج تو دیا مگر ڈاکٹر نے سوچا کہ نہ جانے کوا کب وہاں پہنچے یا نہ ہی پہنچے اور نہ جانے کب اے ایم یہاں آئے یا پھر نہ ہی آئے ، اس لئے کمک پہنچنے تک خود ہی کچھ کرنا چاہئے۔

اب ڈاکٹر نے جو صبیح بھائی کا قریب جاکر بغور معائنہ کیا تو محسوس ہوا کہ یہ جو غیر مرئی زبان میں گفتگو کی جارہی ہے اس میں بار بار سر پر کسی تکلیف کا اشارہ کیا جارہا تھا

ڈاکتر نے جب صبیح کے سر کا معائنہ کیا تو دکھائی دیا کہ صبیح کے سر پر ایک گومڑ سا ابھرا ہوا ہےجس کا تعلق غالباً موبائی لائی لانگ کے زمانے سے لگ رہا تھا جو آج چوٹ لگنے کی وجہ سے پھر سے تکلیف دے رہا تھا۔

سب سے پہلے تو ڈاکٹر نے جائزہ لیا کہ یہ صبیح اچانک پنکھے سے الٹے کیسے لٹک گئے، معلوم ہوا کہ صبیح نے لومڑ پکڑنے کے لئے ایک پھندا تیار کیا تھا اور ڈاکٹر کے گھر آنے سے پہلے اسی کو ٹیسٹ کرنے میں مصروف تھا اسی لئے شاید ڈاکتر کی اچانک آمد پر پریشان ہوگیا تھا

ڈاکٹر کو چائے کاکہ کر صبیح جلدی میں بھاگا تاکہ لومڑ پکڑنے کے لئے جو جال اور پھندا ٹیسٹ کر رہا تھا وہ چھپادے کہیں ڈاکٹر نے دیکھ لیا تو بات سارے الکمونیا تک پھیل جاتی اور سب نے مذاق ارانا تھا ویسے بھی موبائی لائی لانگ کے بعد سے صبیح بھائی نے بے عزتی سے بچنے کے لئے باہر آناجانا چھوڑ رکھا تھا، اب جو گھبراہٹ میں لومڑ پکڑنے کا پھندا اور باقی سامان چھپانے کی کوشش کی تو پھندا پہلے ہی ٹیسٹ کے لئے تیار تھا تو صبیح بھائی کا پاؤں اسی پھندے میں پھنسا اور صبیح بھائی کھڑاک سے سر کے بل پنکھے کے ساتھ لٹکے ہوئے تھے اور اگلی پچھلی بزتی کا سوچ کر ان کی حالت غیر ہوچکی تھی اور اسی کارن ان کے منہ سے عجیب و غریب آوازیں برآمد ہو رہی تھیں اور اب تو وہ تقریباً بے ہوش ہی ہوچلے تھے، ڈاکٹر چند لمحوں میں ساری صورتحال سمجھ گیا اور بے ساختہ ایک مسکراہٹ ڈاکتر کے لبوں پر آگئی۔

خیر اب جو ہونا تھا وہ تو ہوچکا تھا جو بھی ہو صبیح بھائی الکمونیا سیکرٹ سروس میں "تنویر" کے عہدے پر فائز تھے اس لئے بھی اور انسانیت کے ناطے بھی صبیح کو اس مصیبت سے نکالنا ضروری تھا، اے ایم کے آنے نہ آنے کی کوئی گارنٹی بھی نہیں تھی اس لئے ڈاکٹر نے اپنے جادوئی تھیلے میں سے ہاف راونڈڈ شکاری چاقو نکالا اور اوراسے نیم دائرے کے انداز میں گھماکر اس رسی کی جانب پھینکا جس سے صبیح بھائی الٹے لٹکے ہوئے تھے، ڈاکٹر کا نشانے پر پھینکا ہوا ہاف راؤنڈڈ چاقو رسی کے عین درمیان سے رسی کا کاٹتا ہوا گذر گیا اور فوراً ہی دھڑام کی آواز آئی اور اگلے ہی لنحے صبیح بھائی چاروں شانے چت زمین پر پڑے ہوئے تھے۔

ڈاکٹر نے مسکرا کر زمین پرنیم بے ہوش پڑے ہوئے صبیح کی جانب دیکھا اور اُسے ہوش میں لانے کے لئے نسخہ نمبر 1340 آزمانے کا فیصلہ کیا۔ ۔ ۔ ۔ ۔
:lol::lol:
ہاہاہا۔۔۔۔اوہ تو اسکا مطلب ہوا کہ: لو آپ اپنے دام میں صیاد آگیا
اور ہم سمجھ رہے تھے کہ صبیح بھائی پہ کسی آسیب کا سایہ ہو گیا ہے جو ایسی حرکتیں کر رہے ہیں

:pagal:

ویسے یہ نسخہ نمبر 1340 کیا ہے؟
:think::think:
 
Show only guests
Top